11:44 am
 خطہ میں  کوئی بھی  قانون سازی کی اہلیت نہیں رکھتا،عارف چوہدری

خطہ میں کوئی بھی قانون سازی کی اہلیت نہیں رکھتا،عارف چوہدری

11:44 am

خطہ میں کوئی بھی قانون سازی کی اہلیت نہیں رکھتا،عارف چوہدری ترقی یافتہ ممالک میں کاروبار کیلئے بلدیہ سے رابطہ کرنا پڑتا ہے،اوصاف فورم میں گفتگو کھڑی شریف (فورم زاہد شاہ ) ڈپٹی کمشنر میرپو رکا ادھورا فیصلہ دنیا بھر کے تمام ترقی یافتہ ممالک میں کسی بھی شہر یا قصبہ میں کوئی بھی کاروبار کرنے کیلئے میونسپل کارپوریشن سے رجو ع کرنا ہو تاہے ۔ بلدیہ کے انسپکٹر اس بات کا جائز ہ لیتے ہیں کہ آیا یہ جگہ کاروبار کیلئے موزوں ہے یا نہیں عام طور پرکسی بھی قسم کا کاروبار کرنے کی صورت میں بلدیہ کمیٹی شہریوں سے تعاون کرتی ہے اور بعض صورتوں میں بہتر قسم کے ریسٹورنٹ کھولنے پر بلدیہ کے چیئرمین اپنی طرف سے سونے کا چمچہ تحفے میں دیتے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار کشمیری کینڈین رہنما سابق امیدوار اسمبلی حلقہ کھڑی شریف عارف چوہدری نے ’’اوصاف‘‘ فورم میں گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے یہ شہریوں کی حوصلہ افزائی کی انتہا ہے شہر میں زیادہ کا روبار ہونے سے حکومت اور میونسپل کمیٹی کو زیادہ سے زیادہ ٹیکس حاصل ہو تا ہے مگر پھر بھی شہری کسی قسم کا کاروبار میونسپل کمیٹی کی اجازت کے بغیر نہیں کر سکتا ۔ اگر جگہ موزوں ہے تو بلدیہ دفتر اس کا سرٹیفکیٹ جاری کرے گا جو کاروباری حضرات کو ایسی جگہ آویزاں کرنا ہوگا جہاں سے تمام اداروں کے انسپکٹر آسانی سے دیکھ سکیں ، اس اجازت نامے کی مدت ایک سال ہوتی ہے اس مدت ختم ہونے سے 30دن قبل سرٹیفکیٹ مالک شخص کو بذریعہ ڈاک موصول ہوتا ہے اس اجازت نامہ کی فیس زیادہ نہیں ہوتی ، اس سرٹیفکیٹ کا ہونا ہر شہر ی کیلئے ضروری ہے ۔ جن میں بار بر شاپ سے لیکر وکلاء تک شامل ہیں اس سے حکومت کو معمولی فیس کے بدلے میں کروڑوں کی آمدن ہوتی ہے تو دوسری طرف شہر میں کاروبار کے اعداد وشمار کا انداز ہوتا ہے اور ٹیلی فون بک سے شہریوں کو معلومات میں آسانی رہتی ہے مگر ہمارے ہاں اسمبلی سے لے کر بیورو کریسی تک کسی بھی قسم کی قانون سازی کی اہلیت نہیں رکھتی چوں کے قانون کی حکمرانی سے سرکاری نوکری ہماری ریاست میں بے معنی ہوجا تی ہے ۔ گذشتہ ہفتے محکمہ تعلیم کے ملازمین کی ادارہ جات میں حاضری کیلئے بائیو میٹرک سسٹم متعارف کرایا گیا ہے جس پر محکمہ کے ملازمین سراپا احتجاج ہیں حالانکہ صرف محکمہ تعلیم میں ہی کیوں محکمہ مال کے اکثر سرکاری ملازمین کئی کئی روز تک دفتر سے غیر حاضر ہوتے ہیں جن میں پٹواری سرفہرست ہیں ۔ عارف چوہدری

تازہ ترین خبریں