12:00 pm
 کشمیر کی خصوصی حیثیت کوئی ختم نہیں کرسکتا،عارف سرفراز

کشمیر کی خصوصی حیثیت کوئی ختم نہیں کرسکتا،عارف سرفراز

12:00 pm

کشمیر کی خصوصی حیثیت کوئی ختم نہیں کرسکتا،عارف سرفراز کشمیری استصواب رائے سے کم کسی چیز کو قبول نہیں کریں گے بھمبر ( بیورورپورٹ ) صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن بھمبر چوہدری عارف سرفراز ، خواجہ عامر رسول بٹ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ وکلا ء برادری اور کشمیر ی عوام آرٹیکل 370 یا 35A کو تسلیم نہیں کرتے نہ ہی اس کی کوئی حیثیت ہے گزشتہ روز ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن بھمبر کے ایک ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کوئی ختم نہیں کرسکتا کشمیری استصواب رائے سے کم کسی چیز کو قبول نہیں کریں گے وکلاء برادری اور پوری قوم مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کے ساتھ کھڑی ہے آرٹیکل 370 یا 35A کو تسلیم نہیں کرتے نہ ہی اس کی کوئی حیثیت ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹرکٹ بار بھمبر کے اجلاس میں کیا ،اجلاس سے عامر رسول بٹ،خواجہ امین ، چوہدری اسلم،ظفر محمود، امتیاز تاج ، جاوید صادق ،بدر حسین ،منظور حسین،مظہر اقبال، منصف داد ،سجاد الحق ، چوہدری عبدالمجید اور دیگر نے بھی خطاب کیا، انہوں نے کہا کہ بھارتی اقدام کی بھرپور مذمت کی اور حکومت آزادکشمیر سے مطالبہ کیا کہ وہ آزاد کشمیر میں ایمرجنسی نافذ کرے اور آزادکشمیر کو صحیح معنوں میں بیس کیمپ بنائے جن جہادی تنظیموں پر پابندی ہے فی الفور ہٹائی جائے اقوام متحد ہ اپنی قرارادوں کے مطابق کشمیر میں حق خودرادیت کا اہتمام کر کے کشمیر کے اندر جاری مظالم انسانی حقوق کی پامالی کو فی الفور بند کرائے اگر آج ہم نے آزادی کی تحریک اور بھارت کو سبق نہ سکھا یا تو تاریخ ہمیں کبھی معاف نہیں کرے گی افواج پاکستان اور حکومت پاکستان سیاسی ، سفارتی حمایت کے علاوہ عسکری حمایت کرے اور ضرورت ہے کہ مقبوضہ کشمیر کو بھارتی جبر و تسلط سے آزادی دلائے شہداء کشمیر کی قربانیاں رنگ لائیں گئی ان کو رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا بھارت گولی بندوق کی زبان سمجھتا ہے بھارتی دہشت گردی کی روک تھام کیلئے ضروری ہے کہ آزادکشمیر کو حقیقی بیس کیمپ بنا کر ایک بھرپور کردار ادا کیا جائے ۔

تازہ ترین خبریں