12:53 pm
  بلدیاتی انتخابات نہ کروا کر نئی قیادت کا فقدا ن پیدا کیا گیا،عوامی حلقے

بلدیاتی انتخابات نہ کروا کر نئی قیادت کا فقدا ن پیدا کیا گیا،عوامی حلقے

12:53 pm

بلدیاتی انتخابات نہ کروا کر نئی قیادت کا فقدا ن پیدا کیا گیا،عوامی حلقے اقتدار نچلی سطح تک منتقل نہ ہونے کی وجہ سے ممبران اسمبلی کی اجارہ داری ہے مظفرآباد(سٹاف رپورٹر)آزاد کشمیر کے حکمرانوں نے بلدیاتی انتخابات نہ کروا کر ریاست بھر میں نئی قیادت کا فقدا ن پیدا کر دیا 28سالوں سے اقتدار نچلی سطح تک منتقل نہ ہونے کی وجہ سے ریاست بھر میں خرابیوں کے ساتھ ساتھ ممبران اسمبلی کی اجارہ داری قائم ہے ،مسلم لیگ ن کے صدر وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان نے بطور اپوزیشن لیڈر اعلان کیا تھا کہ اقتدار میں آتے ہی ایک سال میں بلدیاتی الیکشن کرواتے جائیں گے لیکن بد قسمتی سے 3سال گزر جانے باوجود وعدہ بھی وفا نہ ہو سکا ۔وزیر اعظم بھی بیورو کریسی اور ممبران اسمبلی کے نرغے میں آ کر بے بس نظر آ رہے ہیں، کسی بھی علاقے کی تعمیر و ترقی میں اہم کردار بلدیاتی ادارہ جات کے عوام کی طرف سے منتخب کیے جانے والے نمائندے اہم کردار ادا کرتے ہیں ۔لیکن آزاد ریاست وہ ریاست ہے جس میں 28سالوں سے بلدیاتی انتخابات نہیں کروائے جا سکے ،28سالوں میں آزاد کشمیر بھر میں نئی آنے والی قیادت کا بھی فقدان پیدا ہو رہا ہے اکتوبر1996میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات28سال گزر جانے کے باوجود نہ سکے ،اس حوالے سے ریاست بھر کے سیاسی کارکنان اور سول سوسائتی میں شدید تشویش پائی جا رہی ہے مختلف سیاسی جماعتوں کے کاکنوں اور سول سوسائٹی نے وزیر اعظم آزاد کشمیر میں بلدیاتی انتخابات کروائے بصورت دیگر تمام ریاستی نوجوان ایک دستخطی مہم کا آغاز کر کے حکومت کو مجبور کریں گے کہ بلدیات انتخابات کا آغاز فوری طور پر کیا جائے۔ بلدیاتی انتخابات