تازہ ترین  
جمعرات‬‮   15   ‬‮نومبر‬‮   2018

مولانا سمیع الحق کا پوسٹمارٹم نہ ہونے کا بہت بڑا نقصان۔۔لواحقین کیلئے انتہائی افسوسناک خبر


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پولیس کا کہنا ہے کہ جمیعت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے قتل کا مقدمہ مجرمان کے پکڑے جانے کے باوجود ان کا پوسٹ مارٹم نہ ہونے کی وجہ سے کھٹائی میں پڑ گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق قتل کی تحقیقات کرنے والے پولیس افسران کا کہنا تھا کہ قتل کی متعددوجوہات جاننے اور عدالت میں مقدمہ چلانے کے لیے

تفتیشی عمل میں پوسٹ مارٹم بنیادی حیثیت رکھتا ہے۔ واضح رہے کہ مولانا سمیع الحق کےاہلِ خانہ کا کہنا تھا کہ ’شریعت کسی مسلمان کی نعش کے پوسٹ مارٹم کی اجازت نہیں دیتی‘، جس پر راولپنڈی کے سیشن جج نے پولیس کو لاش اہلِ خانہ کے حوالے کرنے کی اجازت دےدی تھی۔ اس سلسلے میں کچھ سینئر پولیس افسران نے ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ قانون کے مطابق کسی بھہی غیر فطری موت (قتل) کی وجوہات جاننے کے لیے پوسٹ مارٹم کا ہونا ضروری ہے کیوں کہ یہ نہ ہونے کی صورت میں مقدمہ کمزور اور قاتل کو شک کا فائدہ پہنچتا ہے۔




 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

تازہ ترین خبریں


کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved