تازہ ترین  
بدھ‬‮   14   ‬‮نومبر‬‮   2018

” حکومت سے کہیں سارے کام چھوڑ کر سب سے پہلے ‘ یہ مسئلہ حل کرے” چیف جسٹس نے ہنگامی احکامات جاری کرد یے


اسلام آباد (آئی این پی) سپریم کورٹ نے گلگت بلتستان عدالتی دائرہ اختیار سے متعلق کیس میں وفاقی کابینہ سے سرتاج عزیز کی سربراہی میں قائم کی گئی کمیٹی پر جواب طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت یکم نومبر تک ملتوی کر دی، چیف جسٹس نے کہا کہ وزیراعظم کے دوہ گلگت بلتستان کے رہائشیوں کے مسائل سامنے آئے، حکومت سے کہیں باقی کام چھوڑیں یہ بنیادی حقوق کا مسئلہ ہے۔ پیر کو سپریم کورٹ میں گلگت بلتستان عدالتی دائرہ اختیار سے متعلق کیس کی

سماعت ہوئی، سلمان اکرم راجہ نے بتایا کہ گلگت بلتستان اب مکمل طور پر پاکستان کے زیر انتظام ہے، جسٹس گلزار احمد نے استفسار کیا کہ گلگت بلتستان ایکٹ کا اب جموں کشمیر سے کیا تعلق ہے؟ سلمان اکرم راجہ نے بتایا کہ ہمارا موقف ہے گلگت بلتستان کا جموں و کشمیر سے کوئی تعلق نہیں، چیف جسٹس نے کہا کہ وزیراعظم کے دورہ پر گلگت بلتستان کے رہائشیوں کے مسائل سامنے آئے۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کیا گلگت بلتستان کو صوبے کا درجہ دیا گیا؟ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ کمیٹی سفارشات کی روشنی میں آرڈر 2018کو جاری کیا گیا۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کمیٹی حکومت نے بنائی، کیا سفارشات کا جائزہ لینے کا ٹائم نہیں؟ عدالت نے وفاقی کابینہ سے سرتاج عزیز کی سربراہی میں قائم کی گئی کمیٹی پر جواب طلب کرلیا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آئندہ ایک دن بھی مہلت نہیں ملے گی اٹارنی جنرل انور منصور کی جانب سے معاملے پر مزید مہلت کی استدعا کی گئی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ حکومت سے کہیں باقی کام چھوڑیں یہ بنیادی حقوق کا مسئلہ ہے۔سپریم کورٹ نے گلگت بلتستان عدالتی دائرہ اختیار سے متعلق کیس کی سماعت یکم نومبر تک ملتوی کر دی۔




 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

تازہ ترین خبریں


کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved