خدا کیلئے میں نے زینب کا قتل نہیں بلکہ ہم لو گو ں نے تو ملکر اس کے والدین کو ۔۔۔
  12  جنوری‬‮  2018     |     اہم خبریں

راولپنڈی (نیوز ڈیسک ) سوشل میڈیا پر زینب کے والد کے عقب میں کھڑے ایک نوجوان کی ویڈیو وائرل ہو رہی تھی جس پر سوشل میڈیا صارفین کا ماننا تھا کہ اس شخص اور سی سی ٹی وی فوٹیج میں موجود شخص کی شکل مشابہہ ہے۔یہ تصویر اتنی وائرل ہوئی کہ نوجوان کو اپنی صفائی دینے کے لیے خود ویڈیو پیغام جاری کرنا پڑا۔ اس ویڈیو پیغام میں نوجوان نے بتایا کہ میرا نام وسیم خٹک ہے۔میں گذشتہ دس سال سے پاکستان عوامی تحریک یوتھ ونگ کا ممبر ہوں اور ڈاکٹر طاہر القادری کا پیروکار ہوں۔

وسیم نے بتایا کہ میرے پاس گذشتہ چار سال سے پاکستان عوامی تحریک کے ضلعی صدر کی ذمہ داری رہی ہے اور اب میرے پاس نائب صدر ضلع راولپنڈی کی ذمہ داری ہے۔ میں زینب کے والدین کو لینے کے لیے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ روانہ ہوا۔ ہمیں مرکز سے احکامات موصول ہوئے تھے کہ ہمیں ان کو واپس لاہور کے لیے بٹھانا تھا۔ان کی آمد پر ہم ان سے مل کر ان کو میڈیا ٹاک کے لیے باہر لائے تو اس وقت میری ایک تصویر لی گئی جو سوشل میڈیا پر یہ کہہ کر وائرل کی گئی کہ زینب کے قتل کا ملزم میں ہوں۔ وسیم نے کہا کہ میرا اس واقعہ کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے۔ہم ظلم کے خلاف بولنے والے اور عملی طور پر کام کرنے والے قائد کے جانباز ہیں۔ مجھے افسوس ہے ان لوگوں پر جنہوں نے میری تصویر وائرل کی۔

" allowfullscreen>

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
21%
ٹھیک ہے
48%
کوئی رائے نہیں
28%
پسند ںہیں آئی
3%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved