ننھی پری کی بہن نے روتے ہو ئے حیران کن نام لے لیا
  12  جنوری‬‮  2018     |     اہم خبریں

قصور(نیوز ڈیسک )زینب کی بہن نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ڈی پی او نے لاش ڈھونڈنے والے کو دس ہزار انعام دینے کا کہا،اسلام میں قتل کی اجازت ہوتی تو میں اسے قتل کر دیتی۔تفصیلات کے مطابق زینب کے اہل خانہ احتجاج کرتے ہوئے میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے اس دوران زینب کی بہن نے کہا کہ ہمارے ساتھ اتنا ظلم ہوگیا ہے ،ہم 3بہنیں اور ایک بھائی تھے اور اب ہم 2بہنیں اور ایک بھائی رہ گئے ہیں ۔

کیا زینب کسی کی بیٹی نہیں تھی۔زینب کی بہن کا مزید کہنا تھا کہ پولیس والے یہاں دندناتے رہے اکو لاش نہیں ملی اور جب ملی تو پولیس اہلکاروں نے کہا کہ تالیاں بجاؤ لاش مل گئی ہے۔ڈھونڈنے والے کو 10ہزار انعام دینے کا بھی کہا گیا ۔ہم اسکو انعام کیوں دیتے کیا اس نے زندہ بچی کوڈھونڈا تھا ،ہمیں کیا پتہ کہ انہوں نے خود ہی لاش وہاں رکھ کے بعد میں لاش مل جانے کا ڈھونگ رچایا ہو۔اگر اسلام میں قتل کی اجازت ہوتی تو میں اس شخص کا قتل کر دیتی اور اسکی دھجیاں اڑا دیتا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
89%
ٹھیک ہے
6%
کوئی رائے نہیں
3%
پسند ںہیں آئی
3%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved