یہ ہیں اقبال شاہ جنہوں نے علی خان ترین کو شکست دے کر اپ سیٹ کردیا
  14  فروری‬‮  2018     |     اہم خبریں

لاہور (نیوز ڈیسک) سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق غیرحتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق مسلم لیگ ن کے امیدوار پیر اقبال شاہ نے پاکستان تحریکِ انصاف کے مرکزی رہنما جہانگیر ترین کے بیٹے علی ترین کو 25 ہزار سے زیادہ ووٹوں کے فرق سے

شکست دی ہے۔مسلم لیگ ن کے سربراہ نواز شریف نے لودھراں کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ ن کی غیر متوقع کامیابی کو احتساب کے نام پر انتقام کا عوامی جواب قرار دیا جبکہ عمران خان نے اپنی جماعت کی شکست تسلیم کرتے ہوئے کہا ہے کہ شکست زیادہ مضبوطی سے ابھرنے کا موقع فراہم کرتی ہے۔ یہ نشست گذشتہ دسمبر میں جہانگیر ترین کی سپریم کورٹ کے فیصلے کے تحت نااہلی کے بعد ہی خالی ہوئی تھی۔ وہ سنہ 2015 میں اس نشست سے 40 ہزار ووٹ کی اکثریت سے جیتے تھے۔واضح رہے کہ لودھراں میں قومی اسمبلی کے حلقے این اے 154 کا انتخاب ایک معروف شخصیت یعنی جہانگیر ترین کے بیٹے علی ترین کے مقابلے میں ایک غیر معروف شخصیت پیر اقبال شاہ قریشی نے جیتا۔پیر اقبال شاہ قریشی حلقے میں سماجی شخصیت کے طور پر بھی جانے جاتے ہیں پیر اقبال شاہ شہر کے ممتاز مذہبی گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں اور ان کے صاحبزادے دنیا پور سے نون لیگ کے ایم پی اے ہیں ان کے دو بیٹے ہیں۔ لوگ ان کے بیٹون سے بھی عقیدت رکھتے ہیں ۔پیر اقبال شاہ نے لاہور سے گریجویشن کیا ہے، ان کا ذریعہ معاش زمینداری ہے۔ الیکشن کمیشن میں انہوں نے 9 کروڑ 4 لاکھ 85 ہزار 123 روپے کے اثاثہ جات ظاہر کئے ہیں۔ وہ 2005 میں تحصیل ناظم منتخب ہوئے اور حالیہ بلدیاتی انتخابات میں چیئرمین یونین کونسل منتخب ہوئے۔یونین کونسل کی چیئرمین شپ سے استعفیٰ دے کر قومی اسمبلی کا الیکشن لڑا ہے اور جہانگیر ترین کے بیٹے کو شکست دی۔ان کے والد پیر کرم بخش قریشی نے لوگوں کی فلاح و بہود کے لئے ڈیڑھ مربع اراضی وقف کی تھی جس پر اسپتال، اسکول، گورنمنٹ ڈگری بوائز گرلز کالج قائم ہے جبکہ مخدوم عالی میں جدید ٹراما سینٹر بھی ان ہی کی عطیہ کردہ زمین پر بنا ہے۔دوسری جانب علی خان ترین جہانگیر ترین کے اکلوتے بیٹے اور تین بہنوں کےبھائی ہیں۔ جہانگیر خان ترین کے صاحبزادے لودھراں کے عوام میں اپنے سماجی کاموں کی وجہ سے کافی مشہور ہیں، وہ اپنے والد کے ٹرسٹ کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہیں۔ علی ترین شادی شدہ اور ایک بچی کے والد ہیں، ان کے والد جہانگیر ترین رکن قومی اسمبلی اور تحریک انصاف کے جنرل سیکریٹری بھی رہے۔جہانگیر ترین نے اپنے بیٹے کو دو سماجی اداروں لودھراں پائلٹ پروجیکٹ اور ترین ایجوکیشن فاونڈیشن کا چیف ایگزیکٹو بنا رکھا ہے۔ علی خان ترین کے اثاثہ جات کی مالیت تین ارب 63 کروڑ 31 لاکھ 91 ہزار 33 روپے ہے۔ علی ترین نے بی بی اے کینیڈا سے کیا، لندن سے ایم بی اے کیا۔جہانگیر ترین ایک سرمایہ دار، شوگر ملوں کے مالک، ذاتی جہاز رکھنے والے، منجھے ہوئے سیاستدان اور تحریک انصاف کے جنرل سیکریٹری بھی رہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved