اڈیالہ جیل کے باہر جو بات کہی گئی وہ میں نے نہیں کہی تھی بلکہ۔۔نہال ہاشمی کا حیران کن بیان جاری
  13  مارچ‬‮  2018     |     اہم خبریں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ) مسلم لیگ(ن) کے راہنما نہال ہاشمی نے کہا ہے کہ کبھی بھی عدالت عظمٰی کے بارے میں یامعزز جج حضرات کے بارے میں بدکلامی کی ہے اور نہ ہی آئندہ کروں گا ۔ اڈیالہ جیل کے باہر کی گئی گفتگو میری نہیں بلکہ وہاں کے مظلوم قیدیوں کی زبان تھی میں نے صرف ان کی ترجمانی کی ہے ۔ نہال ہاشمی پر 26 مارچ کو فرد جرم عائد کی جائے گی۔ تفصیلات کے مطابق سوموار کے روز سپریم کورٹ میں نہال ہاشمی کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت ہوئی جس کے بعد عدالت عظمٰی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ کبھی عدالت عظمٰی یا معزز جج صاحبان کے بارے غلط زبان استعمال نہیں

کی اور آئندہ بھی نامناسب زبان استعمال نہیں کر سکتا۔ نہال ہاشمی نے کہا کہ سمجھتا ہوں کوئی جرم نہیں کیا اڈیالہ جیل کے باہر کی گئی میری نہیں بلکہ جیل میں سالوں سے پڑے مظلوم قیدیوں کی زبان تھی لیکن میں نے ان پر ہونے والے ظلم کی ترجمانی کی ۔ا نہوں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے کسی جج کا نام نہیں لیا۔ شفاف ٹرائل ہونا چاہئے جوکہ ہر کسی کا حق ہے سیاسی انتقام کا نشانہ نہ بنایا جائے کیونکہ میں نے کوئی جرم نہیں کیا ۔ پہلے بھی مسلم لیگ(ن) کا کارکن تھا ہوں اور آئندہ بھی رہوں گا ۔ یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے نہال ہاشمی پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور 26 مارچ کو ان پر فرد جرم عائد کی جائے گی ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
100%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved