پنجاب اسمبلی اب تک20سپیکر منتخب کرچکی ہ
  10  اگست‬‮  2018     |     اہم خبریں

لاہور(حافظ نعیم سے )پنجاب اسمبلی اب تک20سپیکر منتخب کرچکی ہے 14اگست سے قبل21واںسپیکر نخب کریگی، پنجاب اسمبلی کی ویل ترین سیکر شپ رانا محمد اقبال کے نام ہے جو مسلسل10سال تک اس اسمبلی کے سپیکر رہے،پنجاب اسمبلی کا پہلے نامPunjab legislativ Councilتھا۔ اس پنجاب کونسل کا پہلا سپیکرMr.montagu Sharard Dawes Butlerجو کہ 3جنوری1921سے21مارچ1922تک رہے،دوسرے سپیکرMr.Hebert AlexaderCassonتھے جو10مئی1992سے16جنوری1925تک رہے،پنجاب اسمبلی کے تیسرے سپیکرخان بہادر شیخ عبدالقادریہ16جنوری1925سے4ستمبر1925تک سپیکر رہے، چوتھے سپیکرخان بہادر چوہدری سر شہاب الدین جو کہ تین مرتبہ اس اسمبلی کے سپیکر رہے3دسمبر1925سے27اکتوبر1926تک،4جنوری 1927سے26جولائی1930تک اور25کاتوبر1930سے24جولائی1930تک یہ سپیکر رہے،پانچویں سپیکرراؤ بہادر چوہدری چھوٹو رام تھے جو کہ20اکتور1936سے10نومبر1936 تک رہے یہ مختصر ترین عرصے کے لئے صرف20روز اسمبلی کے سپیکر رہے، 1937میں پنجاب کونسل کا نام تبدیل کرکے''پنجاب قانون ساز اسمبلی''رکھ دیا گیا۔چھٹے سپیکرخان بہادر چوہدری سر شہاب الدین ایک مرتبہ پھر اسبلی کے سپیکر منتخب ہوئے یہ6اپریل1937سے19مارچ1945ء تک سپیکر رہے،ساتویں سپیکردیوان بہادر ایس پی سنگھ تھے جو21مارچ1946سے4جولائی1947تک سپیکر رہے،دیوان بہادر ایس پی سنگھ یہ وہ شخصیت ہیں جن کے ووٹ کی وجہ سے پنجاب آج پاکستان کا حصہ ہے،اس کے بعد پاکستان 14اگست1947ء کو معرض وجود میں آ گیا، اس اسمبلی کا نام یاک بار پھر تبدیل کرکے''مغربی پنجاب قانون ساز اسمبلی'' رکھ دیا گیا اس کے بعد پاکستان پنجاب اسمبلی کے پہلے اور اسمبلی کے آٹھویں سپیکر خان بہادر شیخ فیاض الدین5جولائی1948سے 7مئی 1951تک سپیکر رہے،اور ایک بار پھر اس اسمبلی کا نام تبدیل کرکے''پنجاب قانون ساز اسمبلی''رکھ دیا گیا۔ اسمبلی کے9ویں سپیکرڈاکٹر خلیفہ شجاع الدین7مئی1951ء سے 14اکتوبر1955ء تک سپیکر رہے، اس کے بعد اس اسمبلی کا نام رکھ دیا گیا اسمبلی کے دسویں سپیکرچوہدری فضل الٰہی تھے یہ20مئی1956ء سے7اکتوبر1958ء تک رہے، اسمبلی کے گیارہویں سپیکر چوہدری مبین الحق صدیقی تھے جو کہ دو مرتبہ اس اسمبلی کے سپیکر منتخب ہوئے16جولائی1963سے12جون1965ء اور12جون1965سے25مارچ1969تک سپیکر رہے ،اس کے بعد اساسمبلی کا نام پراونشل اسمبلی آف دی پنجاب رکھ دیا گیا جو کہ آج تک یہی چلاآ رہا ہے،اسمبلی کے بارہویں سپیکرمسٹر فیق احمد شیخ تھے جو کہ3مئی1972سے11اپریل1977ء تک سپیکر رہے اسمبلی کے تیرہویں سپیکر چوہدری محمد اور بھنڈر جو کہ11اپریل1977سے 5جولائی1977ء تک رہے ،اسمبلی کے چوہدویں سپیکر میاں منظور احمد وٹو تھے جو کہ تین مرتبہ اس اسمبلی ے سپیکر منتخب ہوئے ان کا پہلا دور10اپریل1985سے 2دسمبر1988ء تھا اور یہ اسمبلی غیر جماعتی الیکشن کے انعقاد کے ذریعے وجود میں آئی اس وقت ملک کے صدر ضیاء الحق تھے،ان کا دوسرا دور بطور سپیکر2دسمبر1988 سے7جولائی1990اور تیسرا دور7نومبر 1990سے25اپریل1993ء تک ہے، اس کے بعد میاں نظور وٹو اپنی ہی پارٹی کی پیٹھ میں چھرا گھونپ کر پنجاب کے وزیر اعلیٰ بن گئے تھے جب وقت کے صدر غلام اسحاق خان نے نواز شریف کی حکومت ختم کردی تھی۔پنجاب اسمبلی کے پندرھویں سپیکرمسٹر سعید احمدمنہیس تھے جو کہ4مئی1993سے19اکتوبر1993تک سپیکر رہے اسمبلی کے16ویں سپیکرمحمدحنیف رامے تھے جو 19اکتوبر1993سے19فروری1997تک رہے اس وقت بے نظیر بھٹو وزیر اعظم تھیں،17ویں سپیکر چوہدری پرویز الٰہی تھے یہ19فروری1997سے12اکتوبر1999ء تک اسمبلی کے سپیکر رہے،بعد میں ئی پنجاب کے وزیر اعلیٰ بھی پانچ سال تک رہے،اسمبلی کے 18ویں سپیکر چوہدری محمد افضل ساہی تھے یہ 27نومبر2002ء سے 10اپریل2008تک اسمبلی کے سپیکر رہے اسمبلی کے 19ویں سپیکر رانا محمد اقبال خان تھے جو کہ پہلے11اپریل2008سے3جون2013ء تک پھر3جون2013ء سے مسلسل سپیکر آ رہے ہیں ۔ مذکورہ تمام سپیکرز میں سے قانون سازی کے حوالے سب سے بہتر کارکردگی بطور سپیکر رانا محمد اقبال خان کی ہے ان کے دونو ا د وار میں تقریبا325کے قریب بلوں کی منظوری دی گئی ۔ اب پنجاب اسمبلی کے نئے ممبران منتخب ہو چے ہیں وہ10اگست کو یا ایک دورز آگے پیچھے اسمبلی کے 20ویں سپیکر کا انتخاب کریں گے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

اہم خبریں

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved