پاک فوج کو وزیر اعظم ہا ئو س خالی کر وانے کا حکم ؟
  12  اکتوبر‬‮  2017     |     پاکستان

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے واضح کیا ہے کہ انہوں نے عدلیہ کے پیچھے فوج کھڑی ہونے والی بات قانونی پس منظر میں کی تھی ۔ان کا کہنا تھا کہ میں نے کہا تھا کہ آرٹیکل 190کے تحت فوج عدلیہ کا ہر حکم ماننے کی پابند ہے ،اگر عدلیہ فوج کو حکم دے کہ وزیر اعظم ہاوس خالی کراؤ تو فوج کو یہ کام کرناپڑے گا ۔انہوں نے کہا کہ آج کی فوج اور عدلیہ بدل گئی ہے،اب نہ نظریہ ضرورت والی عدلیہ ہے اور نہ فوج میں کوئی جنرل بٹ ہے ۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف اور عالمی بینک نے اسحاق ڈار کو قبول کرنے سے انکار کردیا ،دونوں عالمی اداروں کا ایجنڈا ہے کہ منی لانڈرر قبول نہیں ،پاکستان معاشی بھونچال سے دو چار نظر آرہا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ حدیبیہ پیپر چوروں کی ماں ہے تو ایل این جی کیس نانی ہے ،یہ 200ارب کا کرپشن سکینڈل ہے ۔شیخ رشید نے کہاکہ نواز شریف کو ایجنڈہ دیا گیا کہ پاک فوج کے ساتھ بھی وہ ہی کردیا جائے جو لیبیا ،عراق اور شام میں ہوا ۔شیخ رشید نے مزید کہا کہ فوج چاہتی ہے کہ جمہوریت کو نقصان نہ ہو،آرٹیکل 190کےتحت فوج سپریم کورٹ کےاحکامات ماننے کی پابند ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ آج نظریہ ضرورت والی عدلیہ نہیں ہے، آج فوج میں کوئی جنرل بٹ نہیں ہے،آج جو کچھ پاکستان میں ہورہا ہے وہ آئین اور قانون کے تحت ہورہا ہے۔عوامی مسلم لیگ کے سربراہ کا مزید کہنا ہے کہ خواجہ سعد رفیق مجھے سنجیدہ نہیں لیتا تو کوئی بات نہیں،آئی بی نے کچھ نہ کچھ مستی ضرور کی ہوگی، اس کے پاس فون سننے کے لیے کوئی کام نہیں۔شیخ رشید نے یہ بھی کہا کہ سپریم کورٹ کے مطابق 30مارچ تک شریف خاندان کے ریفرنس کافیصلہ ہوجائے گا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
83%
ٹھیک ہے
8%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
8%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved