کراچی میں بوری بندلاشیں مل رہی تھیں۔۔جنرل رضوان نے ایسا کیا کیا کہ سب ٹھیک ہو گیا ؟؟؟کالم نگار نے اہم انکشاف کر ڈالا
  12  اکتوبر‬‮  2017     |     پاکستان

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) ملک کے معروف کالم نگار احسان کوہاٹی نے اپنے ایک کالم میں لکھا ہے کہ کراچی کا امن بحال کرنے میں بلاشبہ رینجرز کے ڈی جی جنرل رضوان اخترکا بہت بڑا ہاتھ تھا۔ کہتے ہیں کہ ایک دن میں ان کے آفس میں ہی بیٹھا تھا کہ ان کے ایک ماتحت نے ان کے کان میں آکر کچھ بتایا اور انھوں نے فوری طور پر ٹیلی ویژن سیٹ آن کیا ۔ بریکنگ نیوز چل رہی تھی کہ قائد ایم کیو ایم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ احسان کوہاٹی کا کہنا ہے کہ یہ خبر دیکھتے ہی میںاٹھا اور کہا کہ میں چلتا ہوں ۔ک

یونکہ اس خبر کے بعد خدا نخواستہ بہت لاشیں گرنے والی ہیں۔اور خون خرابہ کیا جائے گا۔ تو جنرل رضوان نے مجھے اشارہ کیا کہ بیٹھ جاؤ کچھ بھی نہیں ہو گا۔ انھوں نے موبائل فون پر احکامات جاری کیے کہ نائن زیرو کا گھیراؤ کرلو اور تما م پبلک مقامات پر سکیورٹی روانہ کردو۔ کوئی بھی سیاسی شخصیت باہر نکل کر واویلا کرے تو اسے وہیں نظر بند کردو۔ اور حیرت کی بات ہے کہ اس وقت بدامنی اپنے عروج پر تھی۔ روز بوری بند لاشیں ملا کرتی تھیں لیکن اس اتنی بڑی گرفتاری کے باوجود ایک پٹاخا بھی نہیں بجا۔ اسلحے کی بہت بڑی بڑی کھیپیں پکڑی گئیں۔ اور شہر قائد کی رونقیں بحال ہونے لگیں۔ اس کے بعد جنرل رضوان کا حیران کن طور پر تبادلہ ڈیفنس یونیورسٹی کردیا گیا۔ سیاسی قوتوں نے ان کے حوالے سے بہت غلط فہمیاں بھی پیدا کیں لیکن وہ اپنا کام کرتے رہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved