کیا بنی گالا قانون سے بالاتر ہے جو غیرقانونی تعمیرات ہوئیں؟ چیف جسٹس برہم
  12  جنوری‬‮  2018     |     پاکستان

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سپریم کورٹ نے بنی گالہ میں غیرقانونی تعمیرات سے متعلق ازخود نوٹس کیس میں تمام فریقین کو مسائل کی نشاندہی اور حل کیلئے 2 ہفتوں میں تجاویز طلب کر لی ہیں۔چیف جسٹس نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ غیر قانونی تعمیرات کے حوالے سے کوئی فیصلہ کرنا پڑے گا، ایک مسئلہ غیرقانونی الاٹمنٹ کا

بھی ہے، کیا بنی گالا قانون سے بالاترہے، جو غیرقانونی تعمیرات ہوئیں؟، عمران خان کے پاس گھر کا نقشہ ہے تو پاس کروا لیں، لیڈر کو ہر معاملے میں فرنٹ سے لیڈ کرنا چاہیے۔بابر اعوان بولے کہ عمران خان کا گھرغیرقانونی تعمیرات میں شامل نہیں، چیف جسٹس نے کہا کہ عدالت نے عمران خان کا گھر غیرقانونی ہونے کا نہیں کہا، مسئلے کے حل کیلئے تجاویز دیں، بہت لوگوں نے درخواست دی کہ عمران خان کا گھر غیرقانونی ہے، اگرعمران خان کی تعمیرات قانون کے مطابق ہیں تو ٹھیک ہے، عدالت نے تعمیرات کو تباہ نہیں کرنا، تمام فریقین مسائل کی نشاندہی اور حل کیلئے تجاویز دیں۔ عدالت نے سماعت 2 ہفتے کیلئے ملتوی کر دی گئی۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
100%
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved