جمعہ‬‮   19   جنوری‬‮   2018
قصور پولیس کے اہلکار زینب کی بڑی بہن کے سامنے کس قسم کی غیر اخلاقی اور بے معنی گفتگو کرتے رہے؟؟بیان سامنے آگیا
  12  جنوری‬‮  2018     |     پاکستان

قصور (مانیٹرنگ ڈیسک) زینب قتل پر پولیس کے شرمناک کردار پرسے ہر آنے والی گھڑی میں پردے اٹھ رہے ہیں۔اب زینب کی بڑی بہن نے بھی میڈیا کے سامنے اہم بیان دے ڈالا ہے۔ زینب کی بڑی بہن کا کہناہے کہ زینب کی گمشدگی کے بعد ہم جب بھی پولیس والوں کے پاس اس کو ڈھونڈنے کی درخواست لے کر جاتے رہے ۔پولیس اہلکار سفاکانہ انداز میں تضحیک آمیز اور ذو معنی جملے بولتے رہے۔ زینب کی بڑی بہن کا کہناہے کہ پولیس اہلکار خود بتاتے تھے کہ

ہم جدھر بھی بچی کو تلاش کرنے جاتے ہیں۔ گائوں کے ان پڑھ اور پینڈو لڑکے اس بچی کو پہلے سے تلاش کررہے ہوتے ہیں۔لگتا ہے ہمیں پولیس سے نکال کر ان پینڈو اور ان پڑھ لوگوں کو پولیس میں بھرتی کر لینا چاہیے۔ زینب کی بہن کا کہناہے کہ ان پڑھ لڑکے ایسی پولیس سے بہتر ہیں جو عام لوگوں کی مدد بے لوث ہوکر کرنا شروع ک دیتے ہیں۔ پڑھے لکھے پولیس والوں کو ہٹا کر انھی ان پڑھ نوجوانوں کو پولیس میں بھرتی کیا جائے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
63%
ٹھیک ہے
13%
کوئی رائے نہیں
13%
پسند ںہیں آئی
13%


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

پاکستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved