02:51 pm
 بھارتی طیارے پاکستان میں داخل ہوئے تو انہیں واپس کیوں جانے دیا ؟

بھارتی طیارے پاکستان میں داخل ہوئے تو انہیں واپس کیوں جانے دیا ؟

02:51 pm

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) بھارت نے علی الصبح پاکستان میں دراندازی کی کوشش کی لیکن پاکستان کے شاہینوں کے اُڑان بھرتے ہی دشمن طیارے دم دبا کر واپس بھاگ گئے۔ اس کارروائی پر بھارت کی جانب سے بھونڈے دعوے سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے سوالات اُٹھانا شروع کردئے کہ بھارتی فضائیہ کے طیارے آخر کیسے پاکستان میں داخل ہو گئے ؟ اور اگر بھارتی فضائیہ کے طیارے پاکستان میں داخل ہونے اورلائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرنے میں کامیاب ہو ہی گئے تھے تو انہیں مارا کیوں نہیں گیا ؟ پاک فضائیہ نے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرنے والے ان بھارتی طیاروں کو کوئی نقصان کیوں نہیں پہنچایا؟ تاہم اب اس حوالے سے کچھ تفصیلات منظر عام پر آئی ہیں۔
تفصیلات کے مطابق بھارتی فضائیہ کے طیارے پاکستانی حدود میں بمشکل 5 کلومیٹر ہی داخل ہو سکے اور اس سے قبل کہ پاک فضائیہ کے طیارے انہیں مار گراتے وہ دُم دبا کر پہلے ہی بھاگ گئے۔ذرائع نے بتایا کہ گذشتہ رات سے ہی ریڈار پر بھارتی فضائیہ کے طیاروں کی مقبوضہ کشمیر میں موجودگی دیکھی گئی۔ چونکہ پاک فضائیہ گذشتہ کافی دنوں سے ہائی الرٹ تھی ، لہٰذا انہوں نے صبح 3 بجکر 30 منٹ پر لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرنے والے دو بھارتی جیٹ طیاروں کی نشاندہی کی ، اس سے قبل کہ پاک فضائیہ کے طیارے ان بھارتی طیاروں کے خلاف کارروائی کرتے، بھارتی فضائیہ کے طیاروں کو لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کا احساس ہوا تو وہ فوری طور پر واپس روانہ ہو گئے۔اس سے صاف ظاہر ہے کہ بھارتی فضائیہ کے طیاروں نے بالاکوٹ جانا تو دور 5 کلو میٹر سے زیادہ لائن آف کنٹرول بھی کراس نہیں کی۔ ذرائع کی جانب سے فراہم کی جانے والی ان تمام تفصیلات کے بعد یہ امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ بھارتی فضائہ کے طیاروں نے غلطی سے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کی اور جب انہیں احساس ہوا تو فوری طور پر واپس چلے گئے۔ یہ حقیقت بھی قابل ذکر ہے کہ بھارتی فضائیہ کے طیاروں نے لائن آف کنٹرول پر پاکستانی حدود میں زیادہ مداخلت نہیں کی اور فوری طور پر واپس روانہ ہو گئے۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ بھارتی فضائیہ کے طیاروں کا پاکستانی فضائیہ کے طیاروں کے ساتھ آمنا سامنا بھی نہیں ہوا، بلکہ بھارتی طیارے اس سے پہلے ہی واپس روانہ ہو چکے تھے۔ واپسی پر جلد بازی میں ہی بھارتی فضائیہ کے طیاروں نے پے لوڈ بھی گرایا اور اسی کو بنیاد بنا کر بھارت نے یہ دعویٰ کرنا شروع کر دیا کہ پاکستان سے پلوامہ حملے کا بدلہ لے لیا گیا ہے اور بھارت نے پاکستان کو مزہ چکھا دیا ہے۔حالانکہ بھارت کے وزیر دفاع ایسی کسی بھی کارروائی سے صبح تک لاعلم تھے۔ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور نے بھی بیان دیا کہ کسی قسم کا جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا جبکہ پاکستانی تجزیہ کاروں کے مطابق بھارت نے اپنی عوام کو ایک لالی پاپ دے دیا ہے جس سے سیاسی فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ پاکستان کی فضائیہ نے کیوں بھارتی فضائی حدود میں داخل ہو کر بھارتی دراندازی کا جواب نہیں دیا ؟ تجزیہ کاروں کے مطابق پاکستان فضائیہ نے ایسا نہ کر کے اپنی سمجھداری اور سنجیدگی کا مظاہرہ کیاکیونکہ اگر دونوں ممالک کی فضائیہ آمنے سامنے آجاتیں تو دونوں ممالک کا نقصان ہوتا۔

تازہ ترین خبریں