01:14 pm
بھارت محفوظ ملک نہیں یہاں دہشتگردی ہو سکتی ہے اس لیے ۔۔۔۔

بھارت محفوظ ملک نہیں یہاں دہشتگردی ہو سکتی ہے اس لیے ۔۔۔۔

01:14 pm

کراچی (نیوز ڈیسک) امریکی محکمہ خارجہ نے اپنے شہریوں کو بھارت کا سفر کرنے سے محتاط رہنے کی تنبیہ کی ہے، محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ امریکی شہری بالخصوص خواتین بھارت میں بڑھتے ہوئے جنسی تشدد یا دہشتگردی کا شکار ہوسکتے ہیں، محکمہ خارجہ نے اپنے بیان میں بالخصوص خواتین کو متنبہ کیا ہے کہ بھارت میں بڑھتا ہوے جنسی تشدد کے باعث وہ سفر کرنے میں احتیاط برتیں جبکہ ممکنہ طور پر حملوں کے پیش نظر تمام امریکی مسافروں کو بھارت کا سفر کرنے میں احتیاط برتنے کی تنبیہ کی ہے، محکمہ خارجہ نے اپنے بیان میں مزید کہا ہے
کہ امریکی شہری سرحد سے 10 کلو میٹر دور رہیں اور مقبوضہ کشمیر میں داخل ہونے کی کوشش نہ کریں، بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ دہشتگرد سیاحتی مقامات، ٹرانسپورٹ کے مراکز، مارکیٹوں، شاپنگ مالز اور سرکاری تنصیبات پر حملے کرسکتے ہیں۔دوسری طرف بھارت نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کرتارپور راہداری منصوبے پر مذاکرات کی کوریج کے لیے پاکستانی صحافیوں کو ویزے جاری نہیں کیے گئے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان کرتارپور راہداری پر کلمذاکرات ہونے جا رہے ہیں جس کے لیے بھارت نے پاکستانی صحافیوں کو ویزے جاری نہیں کیے جس پر افسوس ہے۔ترجمان نے کہا کہ اُمید ہے کے کل کرتارپور راہداری پر مذاکرات دونوں ممالک کے لیے اچھی تبدیلی لائیں گے۔ترجمان دفتر خارجہ نے مزید کہا ہے کہ کرتارپور راہداری کی افتتاحی تقریب میں 30 سے زائد بھارتی صحافیوں نے شرکت کی تھی ۔جب کہ بھارتیوں کے لیے وزیر خارجہ نے عشائیہ کا اہتمام بھی کیا تھا اور صحافیوں نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات بھی کی تھی۔وزیراعظم عمران خان کی بھارتی صحافیوں کے ساتھ ملاقات ہوئی جس کے بعد بھارتی صحافیوں نے ٹوئیر پر اس ملاقات کا اظہار بھی کیا۔بھارتی صحافی بھرکا دت کا کہنا ہے کہ وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ جب میں حکومت میں آیا تو بھارت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھایا تھا لیکن بھارت نے بہت بُرا جواب دیا۔

تازہ ترین خبریں