03:35 pm
وزراء کے استعفے کے بعدوزیراعظم کی باری،معروف صحافی حامد میر کا ایسا دعویٰ کے حکومتی ایوانوں میں کھلبلی مچ گئی

وزراء کے استعفے کے بعدوزیراعظم کی باری،معروف صحافی حامد میر کا ایسا دعویٰ کے حکومتی ایوانوں میں کھلبلی مچ گئی

03:35 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے تمام وزراء کو کہہ دیا ہے کہ میری ٹیم میں وہی رہے گا جس کی کارگردگی اچھی ہو گی۔اسی متعلق گفتگو کرتے ہوئے معروف صحافی حامد میر کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کو چاہیے اپنی فکر کریں جس طریقے سے عمران خان بات کر رہے ہیں کہ میں اس وزیر کو بھی بدل دوں گا اس کو بھی بدل دوں گا میرے خیال سے وزیراعظم کو اپنی فکر کرنی چاہئے کہ کہیں وہ خود تبدیل نہ ہو جائیں
۔حامد میر کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان جس راستے پر چل رہے ہیں جیسا کہ اعظم سواتی کو وزیر بنا کر وہ جلسے میں جاکر کرپشن پر تقریر کر رہے ہیں اس کا مطلب یہ ہے کہ انہیں سمجھ نہیں آرہی کہ میں کیا کر رہا ہوں۔اگر وزیراعظم عمران خان اعظم سواتی جیسے بندے کو وزیر بنا کر دوسروں کو کرپشن پر درس دیں گے تو اس سے ان کی اپنی قابلیت پر سوالات اٹھنے لگ جائیں گے۔واضح رہے گذشتہ روز اورکزئی میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ ملکی سیاسی حالات یہ ہیں کہ ملک پر جو حکمران بیٹھے رہے ، انہوں نے پاکستان کو لوٹا،جب یہ آئے توملک کا قرضہ 6ہزار ارب تھا جب یہ چھوڑ کرگئے تو ملک کا قرضہ 6ہزار ارب سے 30ہزار ارب تک لے گئے۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ نوازشریف خاندان کو جنرل مشرف نے این آر او دے دیا، نوازشریف کو سعودی عرب جانے دیا اور پیچھے حدیبیہ منی لانڈرنگ کا کیس بند کردیا۔منی لانڈرنگ یہ ہے کہ آج جوقرضے ہیں صرف دن کا سود 6ارب روپے زیادہ ہے۔ملک مقروض ہے اس لیے میں ویسے پیسا خرچ نہیں کرسکتا ۔ جس طرح کرنا چاہیے،انہوں نے کہا کہ پنجاب میں ڈی جی خان، راجن پور پیچھے رہ گئے، ہمارے پاس پیسا ہوتا توسب سے پہلے پسماندہ علاقوں کو اٹھاتے۔حدیبیہ منی لانڈرنگ کے ذریعے ایک ارب پاکستان سے چوری ہوکر باہر گیا، پھر زرداری نے این آرا و لیا اور واپس آگئے۔حکومت میں آگئے، جس سے دولت بڑھنا شروع ہوگئی۔تینوں خاندان امیر ہوگئے اور ملک غریب ہوگیا، لندن میں 600کروڑ کے گھر میں رہنے والا نوازشریف کا بیٹا کہتا میں توپاکستانی شہری ہی نہیں ہوں، شہبازشریف کہتا کہ کرپشن ثابت ہوئی تومیرا نام بدل دینا، اب ان پر بھی کرپشن سامنے آگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب سے ہماری حکومت آئی ،یہ ہمارے خلاف ہوگئے، زرداری اور اس کا بیٹا کہتا کہ میں حکومت ہٹا دوں گا، فضل الرحمن کہتا میں حکومت ہٹا دوں گا، اس لیے کہتے کہ آئندہ کبھی نوجوانوں نے ان کو ملک پر سیاست نہیں کرنے دینی۔ان کو ڈر ہے کہ عمران خان 2سال بھی رہ گیا تویہ سارے جیلوں میں ہوں گے، اس لیے جمہوریت خطرے میں آگئی ہے، لیکن ان کو بتادوں کہ جمہوریت خطرے میں نہیں ان کاچوری کیا ہوا پیسا خطرے میں آگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ محمود خان سے کہتا ہوں اور عثمان بزدار بھی سن رہاہوگا،کپتان اپنی ساری ٹیم کو دیکھ رہا ہوتا ہے، کبھی کبھی کپتان کو ٹیم کو جتوانے کیلئے تبدیلیاں کرنا پڑتی ہیں،ابھی بیٹنگ آردڑ بدلا ہے آئندہ بھی تبدیلیاں لاؤں گا، اس کا مقصد ٹیم کو جتوانا ہوتا ہے، میرا مقصد کمزور لوگوں کو اوپر اٹھانا ہے، انہوں نے کہا کہ میں نے تھوڑی سی تبدیلی کی ہے ، آئندہ بھی کروں گا، جو بھی میرے فائدے میں نہیں ہوگا اس کو ہٹا کردوسرا لے کر آؤں گا، میں وزراء اعلیٰ کو کہتا ہوں کہ اللہ ہمیں دیکھ رہا ہے، سرکاری ہسپتالوں میں علاج نہیں ہوتا، بچے سکول نہیں جاتے ،ادویات کی قیمتیں بڑھ جاتی ہیں ،اس کے ہم جواب دہ ہیں، ہمیں اپنی ٹیم پر نظر رکھنی ہے ، اور جو کھلاڑی پرفارمنس نہیں دکھاتا، اس کا بیٹنگ آرڈر بدلیں یا پھر اس کی نیا کھلاڑی لے کرآئیں۔

تازہ ترین خبریں