05:28 am
الیکشن کمیشن کی  نئے انتخابات  کےلئے47 سفارشات,RTS کی مخالفت

الیکشن کمیشن کی نئے انتخابات کےلئے47 سفارشات,RTS کی مخالفت

05:28 am

اسلام آباد(نیوز ایجنسی) الیکشن کمیشن پاکستان نے انتخابات میں آر ٹی ایس استعمال نہ کرنے کی سفارش کر تے ہوئے کہا ہے کہ باہر سے منگوانے والا کاغذ بہت مہنگا پڑتا ہے، الیکشن ایکٹ کی سیکشن 13/2 پر نظرثانی کی جائے جو پریذائیڈنگ افسران کے پولنگ اسٹیشنز سے نتیجہ بھیجنے سے متعلق ہے، کسی کو دہشت گرد قرار دینے کا اختیار الیکشن کمیشن کو نہیں ہے،سیاسی جماعتوں کے لیے بھی جلد انتخابی حد مقرر کرنے کی سفارش کریں گے۔ تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن پاکستان کی جانب سے عام انتخابات 2018 کی جائزہ رپورٹ پیش کر دی گئی۔ رپورٹ سیکرٹری الیکشن کمیشن بابر یعقوب نے پیش کی۔سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ پہلی مرتبہ جائزہ رپورٹ پیش کی گئی ہے جسے قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلیوں کو بھیج دیا گیا ہے۔ اسمبلیاں دو ماہ بعد رپورٹ ٹیبل کر دیں گی۔الیکشن کمیشن نے آر ٹی ایس استعمال نہ کرنے کی سفارش کرتے ہوئے کہا کہ آر ٹی ایس سمیت ٹیکنالوجی کے فوول پروف نہ ہونے تک استعمال نہ کی جائے جب کہ آر ٹی ایس سے متعلق الیکشن ایکٹ کی سیکشن 13/2 پر نظرثانی کی جائے جو پریذائیڈنگ افسران کے پولنگ اسٹیشنز سے نتیجہ بھیجنے سے متعلق ہے۔سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ کسی کو دہشت گرد قرار دینے کا اختیار الیکشن کمیشن کو نہیں ہے جب کہ ملی مسلم لیگ کو الیکشن کمیشن نے رجسٹرڈ نہیں کیا تھا بلکہ وزارت داخلہ نے ملی مسلم لیگ کے ممبران کے کالعدم تنظیم سے تعلق کا ذکر کیا تھا۔بابر یعقوب نے کہا کہ ہم سیاسی جماعتوں کے لیے بھی جلد انتخابی حد مقرر کرنے کی سفارش کریں گے جب کہ بیلٹ پیپرز پر انتخابات میں کوئی تنازع نہیں ہوا تھا، بیلٹ پیپرز کے لیے کاغذ برطانیہ اور فرانس سے منگوانا پڑا تھا تاہم فرانس کی شپنگ کارپوریشن نے کاغذ کی ترسیل سے انکار کیا تھا اسی وجہ سے مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے مقامی کاغذ استعمال کرنے کی سفارش کی ۔ الیکشن کمیشن

تازہ ترین خبریں