05:32 am
علی امین سے مذاکرات ناکام،محسود قبائل کا وزیراعظم کےدورہ جنوبی وزیرستان کے بائیکاٹ کااعلان

علی امین سے مذاکرات ناکام،محسود قبائل کا وزیراعظم کےدورہ جنوبی وزیرستان کے بائیکاٹ کااعلان

05:32 am

لدھا ( نمائندہ اوصاف)وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے دورہ جنوبی وزیرستان کے حوالے سے محسود قبائل اور وفاقی وزیر علی آمین خان گنڈہ پور کے درمیان مذاکرات ناکام محسود قبائل نے عمران خان کے دورہ کا بائیکاٹ کا اعلان کر دیا تفصیلات کے مطابق پولٹیکل کمپاؤنڈ جنوبی وزیرستان کے جرگہ ہال میں وفاقی وزیر امور کشمیر علی آمین خان گنڈہ پور اور محسود قبائل کے درمیان 24اپریل کو وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے دورہ جنوبی وزیرستان کے حوالے سے مذاکرات ہوئے مذاکراتی جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے علی آمین خان گنڈہ پور کا کہنا تھا کہ عمران خان کا دورہ جنوبی وزیرستان کے قبائل اور علاقہ کی ترقی و خوشحالی کے لئے سنگ میل ثابت ہو گا انہوں نے کہا کہ محسود قبائل کے متاثرہ گھروں کا معاوضہ ضرور دیا جائیگا جبکہ وزیر اعظم عمران خان وانا جلسہ سے پہلے مولا خان سرائے میں محسود قبائل کے مشران سے جرگہ کر کے ان کے تحفظات کو دور کریں گے جرگہ میں اس وقت بدنظمی پیدا ہو گئی جب وفاقی وزیر علی آمین خان گنڈہ پور نے کہا کہ وزیر قبائل کے لئے علیحدہ اورمحسود قبائل کے لئے علیحدہ ضلع بنایا جائیگا جس سے قبائلی عوام کے مسائل حل ہونے میں مدد ملے گی اس موقع پر قبائلی مشران نے علی آمین گنڈہ پور پر باور کرایا کہ جنوبی وزیرستان میں اکثریت محسود قبائل آباد ہیں جبکہ انگریز دور میں آبادی کے لحاظ سے تین حصے محسود اور ایک حصہ وزیر ہیں اور ایسا فیصلہ محسود قبائل کے ساتھ ظلم کے مترادف ہے محسود قبائل نے عمران خان کے متوقع دورہ جنوبی وزیرستان کے موقع پر بائیکاٹ کا اعلان کیا اور مذاکراتی جرگہ سے واک آوٹ کیااو ر بعد میں محسود قومی مشران اور عوام نے ٹاون ہال کے مقام پر جرگہ کرکے دورے کا بائیکاٹ سمیت وزیراعلی خیبرپختونخوا سے مذاکرات کے لئے بلائے گئے جرگے سے بھی انکار کردیا مشران کا کہنا تھا کہ جب تک وزیراعظم محسود قوم کے علاقے کا دورہ نہیں کرتے تب تک ہم بحثیت محسودقوم کسی قسم کی تقریبات کا حصہ بننے کے لئے تیار نہیں