06:02 am
لوکل گورنمنٹ بل قانون کے مطابق منظور کرائیں گے، راجہ بشارت

لوکل گورنمنٹ بل قانون کے مطابق منظور کرائیں گے، راجہ بشارت

06:02 am

لوکل گورنمنٹ بل قانون کے مطابق منظور کرائیں گے، راجہ بشارت اپوزیشن بوکھلاہٹ کاشکار ہے، سیاستدانوں کوسوچ میں تبدیی لانا ہو گی ، صوبائی وزیر قانون علیم خان اورحمزہ شہباز کا معاملہ نیب میں ہے، حکومت کا اسس معاملے میں کوئی تعلق نہیں لاہور(سیاسی رپورٹر)وزیر قانون وبلدیات پنجاب راجہ بشارت نے کہا ہے کہ نیا لوکل گورنمنٹ بل قانون کے مطابق منظور کرایا جائیگا۔حکومت کی کوشش ہے کہ اس اسمبلی کے اختیارات میں اضافہ کریں،قائمہ کمیٹیوں کو مضبوط کیاہے، پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں نے وزیراعلی سردار عثمان بزدار پر اعتماد کا اظہار کیا جس کے بعد کوئی بات باقی نہیں رہ جاتی ۔ وہ آج پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں۔راجہ بشارت نے کہا کہ لوکل گورنمنٹ بل کو آئین و قانون کے ضابطے کے مطابق آگے بڑھائیں گے، شورشرابے سے اپوزیشن نے کچھ حاصل نہیں کیا۔اپوزیشن کو بل پر بات کرنے کا پورا موقع فراہم کیاجائے گا۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن بوکھلاہٹ کاشکار ہے جس نے سیڑھیوں پر ’’ گونواز’کے نعرے لگائے ۔سیاستدانوں کو رویوں میں تبد یلی لانا ہو گی۔وزیر قانون نے کہا کہ قیادت کی کرپشن چھپانے کے بجائے اپوزیشن اسمبلی کی مضبوطی کیلئے اپنا کرداراداکرے۔انہوں نے میڈیا کے سوالوں کے دیتے ہوئے کہا کہ علیم خان اور حمزہ شہباز کا معاملہ نیب میں ہے، حکومت کا اس سے کوئی تعلق نہیں۔حمزہ اگر پی اے سی کا چئیرمین نہیں بنتا تو اس سے اسمبلی کے وجود کو کوئی خطر نہیں۔انہوں نے کہا کہ اسمبلی کو قانون سازی کا حق آئین نے دیاہے اور ہم وہی حق استعمال کررہے ہیں۔اس حوالے سے کوئی بھی ادارہ حکومت کو ڈکٹیٹ نہیں کر سکتا۔راجہ بشارت نے مزید کہا کہ نئے بل میں تحصیل یا ڈسٹرکٹ چئیرمین کو ہٹانے کا طریقہ کار دوتہائی اکثریت کے تحت ہی ہوگا تاہم منتخب نمائندہ کے خلاف پہلے اور آخری سال تحریک عدم اعتماد نہیں لائی جا سکتی۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے ساتھ ورکنگ ریلیشن شپ سمیت تمام امور میں بہتری آرہی ہے۔اپوزیشن کے ساتھ قائمہ کمیٹیوں کے حوالے سے 19 اور 21 کا اتفاق ہوا تھا اس پر قائم ہیں۔ راجہ بشارت