06:49 am
بلین ٹریز سونامی منصوبہ،پارلیمانی کمیشن کا دورہ بنوں،پودوں کاجائزہ

بلین ٹریز سونامی منصوبہ،پارلیمانی کمیشن کا دورہ بنوں،پودوں کاجائزہ

06:49 am

بنوں(عمران علی ناشا)پاکستان تحریک انصاف کی بلین ٹریز سونامی منصوبے میں بڑے پیمانے پر مبینہ کرپشن اور گھپلوں کا انکشاف ہوا ہے جس کیلئے صوبائی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر اکرم خان درانی کی درخواست پر حکومتی و اپوزیشن ممبران صوبائی اسمبلی کی 18رکنی پارلیمانی کمیشن تشکیل دے دی گئی ہے کمیٹی میں شامل ممبران جے یو آ ئی کے ممبر صوبائی اسمبلی اکرم خان ،اے این پی کے خوشدل ایڈووکیٹ، پی پی پی کے شیر اعظم وزیر،اے این پی کی خاتون ممبر شگفتہ ملک، مسلم لیگ ن کے سردار یوسف، جے یو آ ئی کے لطف الرحمن اور ریحانہ نے بنوں کا دورہ کیا اور فارسٹ ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے لگائے گئے پودوں کا جائزہ لیا اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر اکرم خان درانی نے کہا کہ بلین ٹریز سونامی منصوبے میں پڑے پیمانے کرپشن ہوئی ہے اور حکومت کا دعویٰ ہے کہ ہم نے 1ارب 20کروڑ پودے لگائے لیکن گراؤنڈ پر صرف با مشکل دس کروڑ پودے دیکھے جا سکتے ہیں جس جگہ پر ہم کھڑے ہیں حکومت کا دعویٰ ہے کہ یہاں پر ہم نے آٹھ ہزار سے زائد کی اراضی پر لاچی کے پودے لگائے ہیں لیکن ہمیں ایک دو سو کنال سے زیادہ کی اراضی پر کوئی پودا دکھائی نہیں دیتا باقی اراضی پر کھیل کود کے میدان دیکھنے کو ملتے ہیں اس منصوبے کے 12ارب روپے میں سے چھ ارب روپے مزدوروں کی تنخواہ کیلئے نکالے گئے لیکن مزدوروں کو مکمل نہیں دی جا رہی چار سو کنال کی زمین پر سرکاری ریکارڈ میں مزدور کو ساڑھے 15 ہزار کے بجائے 5 سے دس ہزار روپے دیئے جا رہے ہیں دو ہزار پودے اُگائے گئے جن کو ریکارڈ میں دو لاکھ ظاہر کیا گیااسی طرح فی پودے کی دیکھ بھال پچاس روپے مقرر کی تھی جوکہ صرف پانچ روپے مل رہے ہیں اور یہ رقم مزدور کو چیک کی بجائے کیش پے مینٹ دی جاتی ہے اے ڈی پی میں فی پودے کی قیمت 9روپے لگائی گئی ہے لیکن ایک روپے اور چھ روپے قیمت والے پودے لائے گئے ہیں اور یہ پودے جہاں سے جن گاڑیوں میں لائے گئے ہیں وہ بھی ہمیں معلوم ہیں کرپشن کو چھپانے کیلئے محکمہ جنگلات کے اہلکاروں نے جعلسازی سے کام لیا اور تین فٹ کے بجائے بڑے پودے لگائے یہ دعوی بھی کیا گیا کہ جہاز سے بھی درختوں کے بیج گرائے گئے یہ پہلی مرتبہ سن رہے ہیں کہ جہاز سے بھی کاشتکاری کی جاتی ہے پچھلے سال جب عمران خان نے بنوں غوریوالہ کے مقام پر بلین ٹریز منصوبے کیلئے ہیلی کاپٹر کے ذریعے آ ئے تھے ہم نے اس وقت بھی کہا تھا کہ اس منصوبے کا اتنا انکم نہیں ملے گا جتنا خرچہ آ گیا ابھی ہم کمیٹی میں مطالبہ کریں گے کہ نالی چک کے مقام پر بلین ٹریز کا اوریجنل ریکارڈ ، تین سال رکھوالی اور پانی کا سارا ریکارڈ بتایا جائے اُنہوں نے کہا کہ فارسٹ ڈیپارٹمنٹ پر عمران خان نے زور دیا تھا کہ جہاں بھی ہوں ایک ارب پودے لگانے ہیں فارسٹ ڈیپارٹمنٹ میں ٹیکنیکل لوگ ہوتے ہیں جو کہ فزیبلٹی تیار کر لیتے ہیں جوکہ ان تمام مراحل پر پاؤں رکھا گیا پورے بنوں میں دس لاکھ پودے توت ،لاچی ، کیکر شیشم کے لگانے کا دعویٰ کیا گیا لیکن ایک ہزار پودے بھی شیشم کے کہیں پر موجود نہیں اس لئے ہم دعویٰ سے کہتے ہیں کہ پی ٹی آ ئی کے دو امزید بڑے سیکنڈل پشاور بی آر ٹی، ایجوکیشن میں 21کروڑ روپے کی کرپشن ہے مجھے تعجب ہے کہ ادارے معمولی معمولی چیزوں پر توجہ دیتے ہیں لیکن اتنے بڑے کرپشن کی طرف ہاتھ نہیں بڑھاتے آج پوری قوم کے سامنے ثابت ہوا ہے کہ بلین ٹریز سونامہ منصوبہ پورا کرپشن ہے اور لوگوں کو دھوکہ دیا گیا ہے صوبائی اسمبلی میں اپوزیشن کے ممبران کی تعداد 35ہے لیکن کردار جرات مندانہ ہے اور کسی بھی کرپشن کو نہیں چھوڑیں گے ہم نے احتجاجا تین اسٹنڈنگ کمیٹیوں سے استعفے بھی کئے ہیں کمیٹی نے سادہ خیل وزیر کا بھی دورہ کیا تحصیل نائب ناظم ڈومیل نیکدار علی ، تحصیل کونسلر جنان وزیر ، تحصیل کونسلر فاروق خان اور تاج محمد وزیر ، ڈسٹرکٹ کونسلر حاجی صدیق ، ناظم طاہر میر و دیگر بھی ہمراہ تھے ۔ بلین ٹریز منصوبہ