12:16 pm
آڈیو لیکس  کے بعد وزیر عظم کی اخلاقی پوزیشن کمزور،دباو بڑھ گیا

آڈیو لیکس کے بعد وزیر عظم کی اخلاقی پوزیشن کمزور،دباو بڑھ گیا

12:16 pm

آئٹم نمبر20 ریاست میں بھونچال کی سی کیفیت،بحران سے نبرد آزما ہونے کیلئے کوئی اقدام نہ اٹھایا جاسکا وزیراعظم کی ٹیم نے جلتی پر تیل کا کام کیا، رد عمل میں سوشل میڈیا پر مزیدگالم گلوچ کی گئی مظفرآباد(مسعود الرحمان عباسی سے)آزادکشمیر کے اندر وزیراعظم راجہ محمد فاروق حیدر کی نجی گفتگو آڈیو کی صورت میں لیک ہونے کے بعد ریاستی سیاست میں بھونچال آگیا ہے ۔مسلم لیگ ن کی حکومت باہمی اختلافات کے باعث اس بحران سے نبرد آزما ہونے کے لیے کوئی قدم نہ اٹھا سکی۔اگرچہ آزادکشمیر میں ان ہائوس تبدیلی کا فی الوقت کوئی امکان نہیں لیکن اخلاقی طور پر وزیراعظم آزادکشمیر کو سخت دھچکا لگا ہے اور وزیراعظم کو سخت بدنامی کا سامنا ہے ۔اس وقت آزادکشمیر میں جاری بحران کی ذمہ دار وزیراعظم آزادکشمیر کی ٹیم ہے ۔آڈیو لیکس کے جاری ہوتے ہی اگران لیکس سے لاتعلقی کا اظہار کردیا جاتا اور لاتعلقی سے متلق3سطور پر مشتمل پریس ریلیز ہی جاری کردی جاتی تو آج وزیراعظم کو یہ دن نہ دیکھنے پڑتے ۔سنگین اور حساس معاملے پر وزیراعظم کی ٹیم نے جلتی پر تیل کا کام کیا اور وزیراعظم کی ٹیم کے ارکان نے آڈیو لیکس کے رد عمل میں سوشل میڈیا پر جو کیا وہ ریکارڈ کا حصہ ہے ۔تجزیہ نگاروں اور صاحب نظر افراد کے مطابق وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خان کی بدقسمتی ہے کہ وہ اپنے ساتھ با صلاحیت اور اہل افراد پر مشتمل ٹیم کا انتخاب نہیں کرسکے ۔وزیراعظم آزادکشمیر کی اپنی ٹیم میں اکثریت خوشامدی گروپ کی ہے جو شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار بننے کی کوشش کرتے ہیں ۔وزیراعظم آزادکشمیر کی ٹیم کی نا اہلی کے باعث اس وقت راجہ فاروق حیدر خان کو عوامی و اخلاقی دبائو کا سامنا ہے ۔وزیراعظم کی آڈیو لیکس منظر عام پر آنے کے بعد وزیراعظم سیکرٹریٹ اور وزیراعظم کی صوابدیدی ٹیم نے بے حسی کا مظاہرہ کیا اور وزیراعظم کی نظروں میں خود کو اعلیٰ ثابت کرنے کے لیے سوشل میڈیا پر تند و تیز جوابات دیتے رہے ۔بیشتر ارکان کی پوسٹیں گالم گلوچ پر مبنی رہیں لیکن جب اس ٹیم کو معاملے کی سنگینی کا احساس ہوا تو انہیں سانپ سونگھ گیا ۔وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان کو اگر مخلص اور با صلاحیت ٹیم میسرہوتی تو محض ایک پریس ریلیز سے یہ بحران ٹل سکتا تھا ۔پریس ریلیز میں ہر دو آڈیو لیکس سے بروقت اظہار لا تعلقی کا اظہار کردیا جاتا تو وزیراعظم کی اخلاقی پوزیشن متاثر نہ ہوتی ۔ اخلاقی پوزیشن

تازہ ترین خبریں