10:02 am
حکومت کا آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ ، مریم نواز نے بھی رد عمل دے دیا

حکومت کا آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ ، مریم نواز نے بھی رد عمل دے دیا

10:02 am

اسلام آباد (نیوز ڈیسک )حکومت کا آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ ہوا جس پر مسلم لیگ ن کی رہنما اور نائب صدر مریم نواز نے بھی رد عمل دے دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں مریم نواز کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے پاس جانا ہے یا نہیں، نا اہل حکمران اسی شش و پنج میں رہے۔ بالآخر اب جب آئی ایم ایف کے پاس جانے کا فیصلہ کیا گیا
تو حکومت نے ملکی خود مختاری کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا ہے جسے اسٹاک مارکیٹ نے بھی واضح طور پر مسترد کر دیا ہے۔9 ماہ کی حکومتی نا اہلی نے ملکی معیشت کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ 9 ماہ کے دوران حکومت کی نا اہلی نے ملک کو معاشی تباہی کی جانب دھکیل دیا ہے۔عوام حکومت کی نا اہلی بھگت رہی ہے جبکہ حکمران مراعات کے مزے لوٹ رہے ہیں۔ معیشت کے تمام سیکٹرز اس وقت تباہ ہونے کے قریب ہیں۔ حکومت کا یہ تجربہ مکمل طور پر ناکام ہو گیا ہے۔انہوں نے 2016ء کا اپنا ایک ٹویٹ بھی شئیر کیا اور کہا کہ نواز شریف نے 2016ء میں ہی آئی ایم ایف کو خدا حافظ کہہ دیا تھا۔ شاباش نواز شریف، شاباش اسحاق ڈار۔اپنے ایک اور پیغام میں مریم نواز کا کہنا تھا کہ اسی اثنا میں اسٹاک مارکیٹ مزید مندی کا شکار ہو گئی ہے اور 34000 پوائنٹس کی کم ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔یہ کوئی مذاق نہیں ہے۔ ہم آخر کس بات کا انتظار کر رہے ہیں؟ حکومت کی نا اہلی اس ملک کو کھا رہی ہے۔واضح رہے کہ گذشتہ روز پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان اسٹاف کی سطح پر بیل آؤٹ پیکج معاہدہ طے پا گیا تھا۔ اس حوالے سے وفاقی مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے بتایا کہ آئی ایم ایف سے پاکستان کوپہلے تین سالوں میں 6 ارب ڈالر ملیں گے،اُمید ہے کہ پاکستان کا آئی ایم ایف کے ساتھ یہ آخری پیکج ہوگا۔