04:36 pm
سعودی ولی عہدنے عمران خان سے کیاوعدہ پوراکردکھایا

سعودی ولی عہدنے عمران خان سے کیاوعدہ پوراکردکھایا

04:36 pm

اسلام آباد(ویب ڈیسک )حج 2019 کے لیے ہونے والی پہلی قرعہ اندازی میں ناکام درخواست گزاروں کے لیے نئے موصول شدہ کوٹے کے تحت قرعہ اندازی کا اعلان کردیا گیا۔وزارت مذہبی امور کے ذرائع کے مطابق دوسری قرعہ اندازی پیر 20 مئی دوپہر 3 بجے ہوگی، جس میں تقریباً 10 ہزار عازمین کا انتخاب کیا جائے گا۔ذرائع نے بتایا کہ پہلی قرعہ اندازی میں رہ جانے والے تمام درخواست گزار اس میں شامل ہوں گے جبکہ جن درخواست گزاروں نے پیسے واپس نکلوا لیے ہیں ان کو بھی اس قرعہ اندازی میں شریک کیا جائے گا۔
وزارت مذہبی امور کے ذرائع نے بتایا کہ منتخب عازمین کو بینک میں مطلوبہ رقم جمع کرنے کے لیے 4 دن کا وقت دیا جائے گا اور حالیہ قرعہ اندازی میں کسی نئی درخواست کو شامل نہیں کیا جائے گا۔اس سے قبل 29 اپریل 2019 کو وزارت مذہبی امور نے سعودی عرب کی جانب سے نئے حج کوٹہ ملنے کے بعد حج اسکیم میں ناکام درخواست گزاروں کو ایک اور موقع دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں وزارت مذہبی امور نے نئے کوٹے کی قرعہ اندازی کی سمری تیار کرلی ہے، جسے وفاقی کابینہ میں پیش کیا گیا۔واضح رہے کہ پاکستانی عازمین حج کے لیے اضافی کوٹے کا معاملہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کے درمیان وزیر اعظم عمران خان نے اٹھایا تھا، جس کے بعد پاکستان کے لیے 16 ہزار افراد کے اضافی کوٹے کو شامل کیا گیا تھا۔اس کوٹے کے اضافے کے بعد پاکستان کے لیے عازمین حج کا کل کوٹہ 2 لاکھ تک پہنچ گیا ہے۔ذرائع کا کہنا تھا کہ اس نئے کوٹے کے اضافے کے بعد وزارت مذہبی امور نے ناکام رہ جانے والے درخواست گزاروں کو ایک اور موقع دینے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں قرعہ اندازی کی جائے گی۔مذکورہ ذرائع نے مزید بتایا کہ 16 ہزار کے اس نئے حج کوٹے کو بھی 60 فیصد سرکاری اور 40 فیصد نجی اسکیم کے تحت تقسیم کیا گیا ہے، جس کے تحت 9 ہزار 4 سو 74 عازمین سرکاری جبکہ 6 ہزار 316 نئے ٹور آپریٹرز کے ذریعے حج پر جاسکیں گے۔اس سلسلے میں ذرائع نے مزید بتایا کہ وزارت مذہبی امور نئے کوٹے کے لیے بینکوں سے رقم نکلوانے والوں کو دوبارہ رقم جمع کروانے کے لیے 4 دن کی مہلت دے گی جبکہ جن افراد کی رقم بینکوں میں موجود ہے وہ براہ راست نئی قرعہ اندازی میں شامل ہوں گے۔ذرائع کا کہنا تھا کہ وزارت خزانہ کی جانب سے تیار کی گئی سمری کی کابینہ سے منظوری کے بعد قرعہ اندازی کا اعلان کیا جائے گا۔واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستان کے لیے حاجیوں کا کوٹہ ایک لاکھ 84 ہزار تھا جبکہ اس کو بھی 60 فیصد سرکاری جبکہ 40 فیصد نجی اسکیم کے تحت تقسیم کیا گیا تھا۔اس سے قبل وفاقی کابینہ نے حج پالیسی 2019 کا اعلان کیا تھا، جس کے تحت ملک کے شمالی علاقہ جات کے رہائشیوں کے لیے حج کی فی کس لاگت 4 لاکھ 36 ہزار 975 روپے ہے جبکہ جنوبی علاقے (کراچی، کوئٹہ اور سکھر) کے لیے 4 لاکھ 26 ہزار 975 روپے ہے، ان اخراجات میں قربانی کی لاگت شامل نہیں ہے، قربانی کے ساتھ یہ اخراجات 4 لاکھ 56 ہزار 426 روپے ہیں۔

تازہ ترین خبریں