04:18 pm
بیوروکریسی آپس میں ملکر مل کر عمران خان کے ساتھ کیا گیم کھیل رہی ہے

بیوروکریسی آپس میں ملکر مل کر عمران خان کے ساتھ کیا گیم کھیل رہی ہے

04:18 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر ملکی صحافی او ر تجزیہ کارذوالفقار راحت کہتے ہیں کہ بیووکریسی عمران خان کے ساتھ جو کھیل کھیل رہی ہے اس پر افسوس ہوتا ہے۔نجی ٹی وی چینل کے پروگرام کے دوران گفتگو کرتے ہوئےذوالفقار راحت کا کہنا تھا کہ عمران خان ایک ایماندار آدمی ہیں جو ملک کا بھلا سوچتے ہیں ۔ لیکن وہ کس طرف جارہے ہیں اور ان کی ٹیم کس طرف جارہی ہے۔ بد قسمتی یہ ہےکہ ایک طرف وزیراعظم عمران خان ڈالر کی قیمت پر منی چینجرز سے ملاقات کر رہے تھے اور ان کو کہہ رہے تھے کہ ڈالر کے ریٹ کو کنٹرول کرو وہیں
دوسری جانب سٹیٹ بینک آف پاکستان نے اسی وقت ڈالر کی قیمت میں اضافہ کر دیا۔ اس سے قبل بھی وزیراعظم عمران خان یہ گلہ کر چکے ہیں کہ ڈالر کا ریٹ بڑھانے کے معاملے پر مجھے آگاہ نہیں کیا جاتا۔انہوں نے کہا کہ سمندر سے تیل نکالنے کا پراجیکٹ کافی پرانا ہے لیکن اس دور میں عمران خان نے اس پر فوکس کیا ۔ لیکن آج بھی وزیراعظم عمران خان امید کی بات کر رہے ہیں لیکن اسی وقت ندیم بابر صاحب نے اس کے برعکس بیان دے دیا۔ ندیم بابر جو وزیراعظم کے مشیر ہے ، اس سے پہلے انرجی کی ٹاسک فورس کے چیئرمین تھے۔ وہاں سے اچانک یہ دوسری طرف چلے گئے۔ندیم بابر اس سے پہلے شہباز شریف کے ساتھ تھے جس کے بعد وہ نواز شریف کے پاس چلے گئے۔ جہاں سے وہ پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہو گئے تھے۔ ایک ہی وقت اور ایک ہی دن میں جہاں وزیراعظم عمران خان قوم کو اُمید دے رہے ہیں اور ان کو خوشخبری دے رہے تھے تو دوسری جانب ندیم بابر اس کے برعکس بیانات دے رہے ہیں۔ ندیم بابر کا کہنا ہے کہ 5500 سے زیادہ گہرائی تک ڈرلنگ کی گئی اور اب یہ ڈرلنگ بند ہو گئی ہے جس کا مطلب یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو تاحال نہیں بتایا گیا کہ ڈرلنگ رک گئی ہے جبکہ ندیم بابر کو اس بات کا علم ہے۔ندیم بابر نے اس ڈرلنگ پر آئی لاگت کا بھی بتا دیا ، یعنی حکومت کا اپنا ہی بندہ یہ تفصیلات فراہم کر رہا ہے کہ حکومت کا 14 ارب ضائع ہو گیا ہے۔ سوال یہ ہے کہ اگر ڈی جی پٹرولیم تک کو اس ڈرلنگ کے ٹیسٹنگ کے نتائج سے آگاہ کر دیا گیا ہے تو وزیراعظم عمران خان کو کیوں نہیں آگاہ کیا گیا۔ صاف پتہ چل رہا ہے کہ آخر بیوروکریسی وزیراعظم عمران خان کے ساتھ کر کیا رہی ہے۔ ندیم بابر اور کچھ بیوروکریسی کے لوگ ساتھ ملے ہوئے ہیں اور مجھے ایسا لگ رہا ہے کہ کوئی گیم ہو رہی ہے۔ یاد رہے کہ چند دن پہلے وزارت پٹرولیم نے کیکڑا ون میں تیل اور گیس نہ ملنے کی تصدیق کی تھی تاہم ترجمان نے کہا ہے کہ ابھی 55 میٹر مزید کھدائی کی جائے گی۔

تازہ ترین خبریں