05:50 pm
عمران خان کو بتا دیا گیا تھا کہ دبائو کم کرنے کےلئے  علیم خان کو رکھنا پڑے گا

عمران خان کو بتا دیا گیا تھا کہ دبائو کم کرنے کےلئے علیم خان کو رکھنا پڑے گا

05:50 pm

کراچی (آئی این پی) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ علیم خان کی رہائی سے عمران خان اور نیب کا گٹھ جوڑ بے نقاب ہو گیا ہے، عمران خان کو بتا دیا گیا تھا کہ دباؤ کم کرنے کےلئے علیم خان کو رکھنا پڑے گا، جتنے الزامات علیم خان پر ہیں اس سے آدھے بھی شرجیل میمن پر نہیں ہیں، پہلے آئی ایم ایف بجٹ تجاویز دیتا تھا اب پورا بجٹ بنا رہا ہے، حکومت اپوزیشن کی افطار پارٹیوں سے خوفزدہ ہے، ڈالر رکھنے کا نام نہیں لے رہا مہنگائی بڑھ رہی ہے۔ منگل کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے کہا کہ جمہوری نظام میں اپوزیشن کی بیٹھک ہوتی رہتی ہے، سیاسی کیریئر میں کبھی اتنی پریشانی نہیں دیکھی،
حکومت اپوزیشن کی افطار پارٹی سے خوفزدہ ہے، افطار پارٹی میں آئندہ کا لائحہ عمل بنایا ہے، ڈالر رکنے کا نام نہیں لے رہا، مہنگائی بڑھتی جا رہی ہے، حکومت نے اپوزیشن کو جواب دینے کےلئے وزراءکی ڈیوٹیاں لگائی ہیں، پہلے بجٹ بنانے میں آئی ایم ایف تجاویز دیتی تھی، آئی ایم ایف کے پاس کیا گروی رکھا گیا، پارلیمنٹ کو بتایاجائے، اب آئی ایم ایف پاکستان کا بجٹ بنا رہی ہے، نیب مکمل طور پر بے نقاب ہو چکا ہے، صرف انتقامی کاروائیاں کر رہا ہے، علیم خان کی رہائی پر عمران خان اور نیب کا گٹھ جوڑ بے نقاب ہو چکا ہے، عمران خان پہلے سے جانتے تھے کہ 100روز بعد ضمانت ملے گی، عمران خان بتائیں کس حیثیت سے علیم خان سے ملے ہیں، عمران خان کو بتایا گیا تھا کہ دباؤ کم کرنے کےلئے علیم خان کو رکھنا پڑے گا، شرجیل میمن کو دو سال سے ضمانت کیوں نہیں ملی، 55گواہ شرجیل میمن کیس میں ہیں، دو سالوں میں صرف 5گواہوں کے بیانات قلمبند ہوئے ہیں، لگتا ہے بیان ریکارڈ کرنے میں دس سال لگیں گے، جتنے الزامات علیم خان پر ہیں اس سے آدھے بھی شرجیل میمن پر نہیں ہوں گے، دکھاوے کےلئے علیم خان کی قربانی دی گئی، تحریک انصاف کو انصاف نہیں ملے گا تو اور کس کو ملے گا۔

تازہ ترین خبریں