03:52 pm
’’اب کوئی گدھا سُنے تو اس کو سمجھائیں‘‘

’’اب کوئی گدھا سُنے تو اس کو سمجھائیں‘‘

03:52 pm

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک )’’اب کوئی گدھا سُنے تو اس کو سمجھائیں‘‘ عمران خان کے سب سے قریبی ساتھی نے بھی منہ موڑ لیا ، کپتان کو بڑا دھچکا ۔۔۔ سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہا ہے کہ عمران خان اتنے برگزیدہ ہوچکے ، مشورہ دینے کا فائدہ نہیں، معیشت اور ٹیکس وصولیوں کا نظام کیسے بہتر بنایا جاسکتا ہے، اس پر بڑی بحث ہوچکی، لیکن اب کوئی گدھا سنے تو اس کو سمجھائیں۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جہلم میں ایک پیر صاحب تھے، وہ کہتے تھے کہ میں مانگنے سے مقام سے بھی آگے نکل چکا ہوں۔
میں نے اس کو کہا بدبخت تو پیغمبروں سے بھی آگے نکل گیا ہے؟ ہارون الرشید نے کہا کہ عمران خان اتنے برگزیدہ ہوچکے ہیں کہ انہیں مشورہ دینے کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر آدمی جانتا ہے کہ اس ملک کی معیشت کیسے ٹھیک ہوسکتی ، سول سروس کیسے ٹھیک ہوسکتی ہے، ٹیکس وصولیوں کے نظام کو کیسے بہتر بنایا جاسکتا۔ اس سب پر بہت زیادہ بحث ومباحثے ہوچکے ہیں۔ معیشت اور ٹیکس وصولیوں کو ٹھیک کرنا چاہیے ، زرعی شعبے میں بہت زیادہ پوٹینشل موجود ہے۔ہارون الرشید نے ایک سوال” عمران خان کوکوئی تومشورہ دیں“کے جواب میں کہا کہ لیکن کوئی گدھا سنے تو اس کو بتائیں۔ دوسری جانب معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے وزیراعظم عمران خان کے وژن کو سراہا ہے جو کہ عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف کی فراہمی اور جمود کو توڑنے کے لئے ہرممکن کوششیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک عظیم رہنما اقتصادی مشکلات پر قابو پانے کے لئے اور عوام کا معیار بہتر بنانے کے لئے حکمت عملیاں بنانے کی کوشش کرتا ہے اور عمران خان میں ملک کو بحرانوں سے نکالنے کی ایسی تمام صلاحیتیں پائی جاتی ہیں۔عوامی نمائندوں کو ملک کی عدلیہ، سیاسی، پارلیمانی اور اقتصادی شعبوں میں بہتری اور اصلاحات لانے کے لئے اس وقت پارلیمنٹ جیسے فورمز استعمال کرنے چاہئیں جب ملک اور عوام کے وسیع تر مفاد میں ایسا کرنے کی ضرورت ہو۔

تازہ ترین خبریں