03:43 pm
عوام دشمن بجٹ منظور نہیں ہونے دیا جائےگا، اپوزیشن جماعتیں

عوام دشمن بجٹ منظور نہیں ہونے دیا جائےگا، اپوزیشن جماعتیں

03:43 pm

لاہور(این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کی مرکزی قیادت نے حکومت کی پالیسیوں پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے آئندہ مالی سال کے بجٹ کی منظوری کو روکنے کے لئے د یگر اپوزیشن جماعتوں سے مل کر مشترکہ حکمت عملی بنانے پر اتفاق کیا ہے،جبکہ مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ موجودہ نااہل اور غیر نمائندہ حکومت کا جاری رہنا عوام اور ملک کو تباہی و بربادی اور ایسے المیے سے دو چار کر سکتا ہے جس کی تلافی ممکن نہیں رہے گی، مریم نواز، بلاول بھٹو اور دونوں جماعتوں کے رفقاء کے درمیان ہونے والیملاقات میں ملک کی مجموعی صورتحال،
اپوزیشن کی مجوزہ اے پی سی، نیب کی جانب سے اپوزیشن کی گرفتاریوں، ججز کے خلاف ریفرنس پر تبادلہ خیال اور میثاق جمہوریت کی روح کے مطابق آگے بڑھنے اورمستقبل میں بھی رابطے جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا۔ مسلم لیگ (ن) کی مرکزی رہنما مریم نواز کی دعوت پر بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں پیپلز پارٹی کے وفد کی جاتی امراء رائے ونڈ آمد ہوئی جہاں پر مریم نواز نے پارٹی کے دیگر رہنماؤں کے ہمراہ ان کا استقبال کیا۔ پیپلز پارٹی کے وفد میں قمر زمان کائرہ،جمیل سومرو،مصطفی نوازکھوکھر، چوہدری منظور اور حسن مرتضی شامل تھے جبکہ مسلم لیگ (ن) کی جانب پرویز رشید، سردار ایاز صادق،رانا ثنااللہ خان، کیپٹن (ر) محمد صفدر،مریم اورنگزیب اور محمد زبیر نے مریم نواز کی معاونت کی۔ذرائع کے مطابق دونوں جماعتوں کے رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوئی۔ اس موقع پر حکومت کی پالیسیوں اور حالیہ بجٹ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا گیا کہ اپوزیشن جماعتیں عوام کو تنہا نہیں چھوڑیں گی اور ان کی آواز بنیں گی۔ ملاقات میں اپوزیشن کی مجوزہ اے پی سی اور اپوزیشن سے رابطوں کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا گیا اور طے پایا کہ بجٹ کی منظوری کے موقع پر اپوزیشن مشترکہ حکمت عملی اپنائے گی اور بجٹ کی منظور ی رکوانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔اس کے لئے حکومت کے قیام میں ووٹ کرنے والی اور اتحادی جماعتوں سے بھی رابطے کئے جائیں گے۔ ملاقات کے دوران نیب کی جانب سے اپوزیشن کی قیادت اور رہنماؤں کی گرفتاریوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ اس طرح کے ہتھکنڈے عوام کے حقوق کیلئے جدوجہد کی راہ میں رکاوٹ نہیں بن سکتے۔ اس موقع پر دونوں رہنماؤں کا کہنا تھاکہ وفاق پاکستان کی وحدت، اکائیوں کے اتحادویکجہتی اور اعتماد کی ضمانت صرف آئین ہے،قوم کو ایسی قیادت کی ضرورت ہے جو باہمی اعتماد اور اتحاد کا باعث ہو،آئین کی سربلندی اور جمہوریت ہی ملک کو آگے لیجاسکتی ہے۔ دونوں جماعتوں نے میثاق جمہوریت کی روح کے مطابق آگے بڑھنے پر اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ حکمران آئین، پارلیمان، عوام، اپوزیشن، عدلیہ، میڈیا سمیت ہر اختلافی آواز پر حملہ آور ہیں،نئے پاکستان کے نام پر ہونے والا فراڈ قوم کو مزید برداشت نہیں اورقوم اپوزیشن کی طرف دیکھ رہی ہے جسے مایوس نہیں کریں گے۔ آئی ایم ایف بجٹ عوام اور ملک دشمن ہے جسے منظور نہیں ہونے دیں گے اور اس کے اپوزیشن جماعتیں مل کر حکمت عملی بنائیں گی۔ رہنماؤں نے کہاکہ موجودہ حکومتی مکمل طورپر ناکام ہوچکی ہے۔مقبول سیاسی جماعتیں ہی قوم کو نیا اعتماد، مسائل سے نکلنے کا لائحہ عمل اور متحد کرسکتی ہیں۔

تازہ ترین خبریں