11:14 am
 بجلی چوری کرنیوالوں کیخلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت مقدمات قائم کر دیے جائینگے ، فیض اللہ

بجلی چوری کرنیوالوں کیخلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت مقدمات قائم کر دیے جائینگے ، فیض اللہ

11:14 am

سہنسہ ( نمائندہ خصوصی )مہتمم برقیات راجہ فیض اللہ خان نے کہا کہ بجلی چوری کر نے والوں کے خلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت مقدمات قائم کر دیے جائیں گے چوری میں ملوث سرکاری ملازمین کو نوکری سے ہاتھ بھی دھونے پڑیں گے اور جیل بھی جانا پڑے گا نادہندگان کے خلا ف مال گزاری ایکٹ کے تحت کیسز عدالتوں میں بھیج دیے گئے ہیں ریکوری کے لیے آپریشن مہم تیزی سے جاری ہے اہلکاروں کو آن ایکشن بھی کر دیا ہے فری ہینڈ بھی دے دیا ہے ایس ڈی او اور لائن سپرنٹنڈنٹ پر مشتمل ٹاسک فورس بھی قائم کر دی گئی ہے ہزاروں نادہندگان کو الٹی میٹم بھی دے دیا گیا ہے 25 جون تک
واجبات ادا نہ کر نے والوں کوعدالتو ں کا سامنا کر نا پڑے گا ۔ نہ اختیارات کا غلط استعمال ہونے دوں گا اور نہ ہی فرائض منصبی میں کوتاہی برداشت کروں گا ۔ نا دہندگان بقایا جات کی ادائیگی یقینی بنا لیں آپریشن کے دروان کسی بھی شرمندگی کا سامنا نہ کر نا پڑے ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے کیا ۔ انھوں نے کہا کہ بجلی کے نادہندگان کو بقایا جات کی ریکوری کے لیے مہم شروع کر دی گئی ہے ۔ ضلع بھر میں برقیات نے وصولی مہم پلان اور حکمت عملی کے ساتھ جاری ہے نادہندگان کے خلاف پہلے مرحلے میں کروڑوں روپے وصول کر لیے گئے ہیں انھوں نے کہا کہ صارفین کان کھول کر سن لیں اگر بجلی بحال چاہتے ہو تو واجبات کی ادائیگی کو یقینی بنانا ہوگا نہیں تو کنکشن بھی کٹ جائے گا ہتھکڑیاں بھی لگیں گی جیل کی ہوا بھی کھانی ہوگی تار میٹر ضبط کر لیے جائیں اور کنکشن کی بحالی کیلیے نئے سرے سے ان کو تحریک چلانا ہوگی ۔ برقیات کے واجبات ادا نہ کر نے اور قومی خزانہ کو ٹیکہ لگانے والی اب بڑی مچھلیوں پر بھی ہاتھ ڈالیں گے وہ اب عنقریب گرفتاری کے جال میں پھنسنے والے ہیں اب کوئی بھی نہیں بچ پائے گا انھوں نے کہا کہ محکمہ برقیات سے وابسطہ جملہ ملازمین کا تعلق برائے راست عوام سے ہے موجودہ دور کی ہر ضرورت کا تعلق بھی بجلی سے ہے ۔ اس حوالے سے لوگوں کی توقعات بھی بہت زیادہ ہیں ہمیں لائن لاسز کا خاتمہ کر نا ہوگا بجلی چوری پر قابو پانا ہوگا ریوینیو بڑھانا ہو گا اور ادارے کو مستحکم کر نا ہوگا بجلی کی فراہمی کو یقینی بنائیں گے دفاتروں اور فیلڈ میں فرائض منصبی سرانجام دینے والے ملازمین صارفین کے ساتھ خوش اخلاقی سے پیش آئیں انھوں نے کہا کہ بجلی کو بطور ایندھن اور توانائی سمیت جھاڑو تک گھروں ، دفاتروں ، دھلائی ستھرائی کا کام بھی بجلی سے لیا جاتا ہے زندگی کا سارا دارو مدار بجلی کے نظام سے منسلک ہے ۔ محکمہ بھی لوگوں کو مفت میں سروسز فراہم نہیں کر تا جو سروسز لوگوں کو دی جاتی ہیں یہ محکمہ آزاد کشمیر میں ریوینیو دینے والا سب سے بڑا محکمہ ہے برقیات کے ملازمین دیانتداری ذمہ داری فرض شناسی سے فرائض سرانجام دیں تو بجلی کی چوری بھی روکی جا سکتی ہے اور ریکوری کو بھی یقینی بنایا جاسکتا ہے ۔ ادھر نائب مہتمم برقیات عامر محمود مہتمم برقیات نے راجہ فیض اللہ خان کی طرف سے الٹی میٹم ملتے ہی آن ایکشن ہوگئے انھوں نے ریکوری کا ٹاسک مقرر کر دیا ۔ اور نادہندگان کے خلاف گرینڈ آپریشن کی تمام حکمت عملی تیار کر لی گئی ہے انھوں نے کہا کہ نادہندگان کان کھول کر سن لیں کہ 25 جون کی ڈیڈ لائن ہے اب مزید نہ مہلت ملے گی اور ٹائم دیا جائے نہ ہی لولی پاپ سے کام چلے گا نہ موقع ملے گا ۔25 جون کے بعد کنکشن بھی کٹ جائیں گے اور گرفتاریاں بھی ہوں گی ۔ ہم نے دفتروں کو چھوڑ دیا اور دیہاتوں کا رخ کر لیا ہے ۔ اگر صارفین بجلی بحال رکھنا چاہتے ہیں اور گرفتاریوں سے بچنا چاہتے ہیں تو بے باکی کریں ۔

تازہ ترین خبریں