11:28 am
مجھے چند روز میں گرفتار کر لیا جائے گا کیونکہ ۔۔۔!

مجھے چند روز میں گرفتار کر لیا جائے گا کیونکہ ۔۔۔!

11:28 am

لاہور (نیوز ڈیسک ) سینئر صحافی حامد نے کہاہے کہ راناثنا ءاللہ تین چار ہفتے سے کہ رہے تھے کہ مجھے گرفتار کرلیا جائیگا اور گرفتار کرنے کی وجہ تلاش کی جارہی ہے ۔تفصیلات کے مطابق رانا ثناء اللہ کی گرفتاری پر نجی ٹی وی چینل جیونیوز پر تبصرہ کرتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ رکن قومی اسمبلی کو گرفتار کرنے سے پہلے سپیکر قومی اسمبلی کوبتانا پڑتا ہے لیکن رانا ثنا ءاللہ کوافراتفری میں گرفتار کیا گیا ہے ، رانا ثنا ءاللہ تین چار ہفتے سے مجھ سے جب بھی ملتے تھے تو یہ کہتے تھے کہ مجھے عنقریب گرفتار کرلیا جائیگا۔
جب میں ان سے پوچھا کہ آپ کو کس جرم میں گرفتار کیا جائیگا ؟تو وہ انہوں نے بتایا کہ جرم ابھی تلاش کیا جارہاہے ۔ انہوں نے کہا کہ اے این ایف کو پہلے بھی سیاسی مقدمات میں استعمال کیا جاتا رہاہے ، اے این ایف کو ناصرف سیاستدانوں کے خلاف استعمال کیا جاتاہے بلکہ شہادتیوں کو بھی گرفتار کیا جاتا ہے ۔ حامد میر کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کے ساتھ ملاقات کرنیوالے گوجرانوالہ کے رکن اسمبلی کے گھر ہونیوالے واقعہ پر حکومتی شخصیات کی جانب سے کہا جار ہا تھا کہ اس واقعہ کے پیچھے بھی رانا ثنا ءاللہ کا ہاتھ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ رانا ثنا ءاللہ کہ پہلی بار گرفتار نہیں کیا گیا بلکہ اس سے قبل بھی کئی مرتبہ گرفتار کیا گیا ہے لیکن رانا ثنا ءاللہ کو گرفتار کرنیوالی حکومت کو نقصان زیادہ اور فائدہ کم ہوا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ رانا ثناءاللہ کی گرفتاری کی اے این ایف کی جانب سے کوئی بھی تو جیح پیش کی جائے لیکن عوامی سطح پر ان کی گرفتار ی کو سیاسی سطح پر ہی لیا جائیگا ۔ خیال رہے کہ اے این ایف نے فیصل آباد سے لاہور آتے ہوئے رانا ثناء اللہ کو گرفتار کر لیا ہے، انکی گرفتاری کی خبر شہباز شریف تک پہنچا دی گئی ہے اور ابھی تک (ن) لیگ کا با ضابطہ رد عمل سامنے نہیں آیا ہے۔

تازہ ترین خبریں