02:11 pm
مریم نواز کو تاحیات قید کی سزاسنائے جانے کا امکان، دوبارہ گرفتاری کی تیاریاں شروع کردی گئیں

مریم نواز کو تاحیات قید کی سزاسنائے جانے کا امکان، دوبارہ گرفتاری کی تیاریاں شروع کردی گئیں

02:11 pm

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)مریم نواز کو تاحیات قید کی سزاسنائے جانے کا امکان، دوبارہ گرفتاری کی تیاریاں شروع کردی گئیں۔۔۔ ماہر قانون راجا عامر عباس کا کہنا ہے کہ مریم نواز اگر ضمانت کروائے بغیر احتساب عدالت میں پیش ہوجاتی ہیں تو پھر ان کو گرفتار کرلیا جائے گا۔تفصیلات کے مطابق ماہر قانون راجا عامر عباس کا ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے معاملے پر کہنا ہے کیلبری فونٹ چیئرمین نیب سے پوچھنا چاہئیے
کہ انہوں نے اس حوالے سے درخواست کیوں نہیں دی۔یا نیب کو چاہئیے تھا کہ وہ کہتے ہیں کہ ہمارا پارٹ اے پر تو فیصلہ ہو گیا تھا اب پارٹ بی پر کام کرنا ہے۔جہاں تک سزا کی بات ہے تو اس میں 7 سال سے لے کر 10 سال تک جب کہ آرٹیکل 461 کے تحت تاحیات قید کی سزا بھی سنائی جا سکتی ہے۔راجا عامر عباس کا مزید کہنا تھا کہ اگر مریم نواز عدالت جاتی ہیں تو انہیں گرفتار کر لیا جائے گا۔اس لیے مریم نواز کو پہلے سے ضمانت کا بندوبست کرنا پڑے گا لیکن وہ بھی اتنا آسان کام نہیں ہے۔اس لیے اگر مریم نواز عدالت جاتی ہیں اور ان پر چارج لگ جاتا ہے تو اسی وقت انہیں حراست میں لے لیا جائے گا۔خیال رہے ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے معاملے پر مریم نواز کو نوٹس جاری کرد یا گیا تھا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے 19 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے معاملے پر عدالت طلب کیا تھا۔نیب کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز کی پیش کردہ ٹرسٹ ڈیڈ جعلی ثابت ہوئی۔یاد رہے کہ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں سابق وزیرِاعظم نواز شریف کو 10 سال قید، ایک ارب 29 کروڑ روپے جُرمانہ، مریم نوازکو سات سال قید، 32 کروڑ روپے جُرمانہ، شریف فیملی کے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس بحقِ سرکار ضبط کرنے کا حکم اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو بھی ایک سال قید بامشقت کی سزا سنائی تھی۔جس کے بعد سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کی جانب سے ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا کا فیصلہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔ بعد ازاں گذشتہ برس ستمبر میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف،ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کو سنائی گئی سزا معطل کرتے ہوئے تینوں کی رہائی کا حکم دے دیا تھا جس کے بعد انہیں اڈیالہ جیل سے رہا کردیا گیا تھا۔

تازہ ترین خبریں