05:22 pm
اس شخص کو جیل بھیج دیا جائے

اس شخص کو جیل بھیج دیا جائے

05:22 pm

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)ریکوڈک کیس میں پاکستان کو تقریباً6 ارب ڈالر جرمانے پر وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری بھی بھڑک اٹھے اور اپنے ہی ساتھی پی ٹی آئی کے سینئر رہنما حامد خان کو جیل بھیجنے کا مطالبہ کردیا۔تفصیلات کے مطابق فواد چودھری نے یہ مطالبہ ریکوڈک کیس میں عالمی بینک کا فیصلہ آنے کے بعد کیا ہے۔ پاکستان کو 6 ارب ڈالر کا نقصان ہونے پر وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے ٹوئٹر پر اپنے رد عمل میں کہا
کہ ’ افتخار چودھری کے فیصلوں کی قیمت پاکستان مسلسل ادا کر رہا ہے، ایک اعلیٰ سطحی کمیشن اس شخص کے فیصلوں کے میرٹس جانچنے کیلئے بننا چاہئے، افتخار چودھری ، حامد خان اور اس کے دیگر ساتھیوں کو پاکستان کو ناقابل تلافی نقصان پہنچانے کے جرم میں جیل بھیجنا چاہئے۔‘واضح رہے کہ عالمی بینک کے انٹرنیشنل سینٹر فار سیٹلمنٹ آف انویسٹمنٹ ڈسپیوٹس نے ریکوڈ کیس کا فیصلہ سنا دیا ہے۔ جس کے مطابق پاکستان کو چلی کی کمپنی کو پانچ ارب نو سو چھیتر ملین ڈالر کا ہرجانہ ادا کرنا ہوگا۔پاکستان کو ہرجانے کی رقم چلی اور کینیڈا کی مائننگ کمپنی ٹیتھیان کو اداکرنا ہوگی۔ ٹیتھیان کمپنی نے پاکستان سے 16ارب ڈالر ہرجانہ وصول کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔ ذرائع کے مطابق پاکستان ہرجانے کی رقم 16ارب سے کم کراکر6ارب ڈالرلانے میں کامیاب ہوگیا،۔ٹیتھیان کمپنی کو سونے اور تانبے کے ذخائر کی تلاش کا لائسنس جاری کیا گیا تھا۔عالمی بینک کے ثالثی ٹریبونل کا فیصلہ گزشتہ روز حکومت پاکستان کو بھجوایا گیا۔ عالمی بینک کے ٹریبونل کا فیصلہ 700صفحات پر مشتمل ہے۔

تازہ ترین خبریں