03:37 pm
مسئلہ کشمیر، امریکہ اور بھارت کے اختلافات، پاکستان نے گہری چال چل دی،اختلافات کا ایسا فائدہ اٹھالیا

مسئلہ کشمیر، امریکہ اور بھارت کے اختلافات، پاکستان نے گہری چال چل دی،اختلافات کا ایسا فائدہ اٹھالیا

03:37 pm

اسلام آباد (نیوز ڈیسک )کشمیر کے معاملے پر پاکستان نے بھارت اور امریکہ کے درمیان پیدا ہونے والے اختلاف کو اچھا قرار دے دیا ہے۔ وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شریں مزاری نے کہا ہے کہ ٹرمپ اور مودی کے درمیان بداعتمادی پیدا ہوئی ہے
جو کہ سفارتی طور پہ ہمارے لیے اچھا ہے۔ شیریں مزاری نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا ہے کہ ’’امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ نے دوبارہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان مسئلے کے حل کی پیشکش کی ہے لیکن اصل سوال یہ ہے کہ کیا مودی نے امریکہ سے اس کے لیے کہا تھا یا نہیں۔ٹرمپ اور مودی کے درمیان نئی بداعتمادی پیدا ہوئی ہے جو کہ سفارتی طور پہ ہمارے لیے اچھا ہے۔ اب بھارت اور مودی کو اس کی وضاحت دینی پڑے گی۔ یہ ان کا مسئلہ ہے‘‘۔واضح رہے کہ امریکی صدر نے پاکستان کو مسئلہ کشمیر حل کروانے کی پیش کش کی ہے، ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ پاکستان افغان مسئلے کے حل کیلئے امریکا کی زبردست مدد کرتا آیا ہے، امریکا بھی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ثالثی کا کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہے۔امریکیصدر نے کہا کہ امریکا بھی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ثالثی کا کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے بھی امریکہ سے ثالچ بننے کی درخواست کی ہے لیکن بھارت نے اس کی تردید کر دی ہے اور کہا ہے کہ یہ مسئلہ پاکستان اور بھارت باہمی طور پر ہی حل کریں گے اور نریندر مودی نے ٹرمپ سے ثالث بننے کی درخواست نہیں کی۔ پاکستان نے امریکی صدر کی اس آفر کا خیر مقدم کیا ہے اور جواب میں وزیراعظم عمران خان نے بھی امریکہ اور ایران کے درمیان ثالث بن کر مسائل حل کروانے کی پیشکش کی ہے۔