05:41 pm
سندھ میں سیلابی صورتحال، حکومت غائب، مشکل وقت میں پاک فوج کشتیاں لے کر شہریوں کی مدد کو پہنچ گئی

سندھ میں سیلابی صورتحال، حکومت غائب، مشکل وقت میں پاک فوج کشتیاں لے کر شہریوں کی مدد کو پہنچ گئی

05:41 pm

کراچی (نیوز ڈیسک) سندھ میں سیلابی صورتحال جیسے مشکل وقت میں پاک فوج مدد کو پہنچ گئی.تفصیلات کے مطابق شہر قائد میں منگل کو وقفے وقفے سے بارش کا سلسلہ دوسرے روز بھی جاری رہا۔ بارش کے باعث کرنٹ لگنے سے دو بچوں اور ایک بچی سمیت جاں بحق افراد کی تعداد 10 ہوگئی ہے ،نیپرا نے کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ اور کرنٹ لگنے سے انسانی جانوں کے ضائع کا نوٹس لیتے ہوئے کے الیکٹرک سے رپورٹ طلب کرلی ہے
۔مختلف علاقوں میں بارش کا پانی گھروں میں داخل ہونے کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے ۔ شدید بارش کے نتیجے میں تھڈو ڈیم بھر گیا جس کے نتیجے میں پانی کا ریلا ناردرن بائی پاس کے قریب سپر ہائی وے پر داخل ہوگیا۔مون سون بارش کے بعد سپر ہائی وے مویشی منڈی کا نظام بھی درہم برہم ہوگیا اور نشیبی مقامات پر پانی بھرنے سے بیوپاریوں کو قربانی کے جانور محفوظ مقام پر منتقل کرنا پڑ گئے ۔بارش کے باعث اہم کاروباری مراکز، مارکیٹیں اور بازار بند ہیں جبکہ دفاتر، کارخاںوں اور فیکٹریوں میں حاضری دوسرے روز بھی معمول سے انتہائی کم رہی۔جب کہ دوسری جانب میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے بارش کے باعث کراچی کا برا حال ہے۔ سندھ میں سیلابی صورتحال جیسے مشکل وقت میں صوبائی حکومت کا کوئی اتا پتہ نہیں۔اس صورتحال میں پاک فوج مدد کو آ پہنچی ہے۔سیلاب میں پھنسے شہریوں کو نکالنے کیلئے سڑکوں پر گاڑی کی جگہ کشتیاں آگئیں۔پاک فوج کے جوان صورتحال کو کنٹرول کر رہے ہیں تاکہ لوگوں کو پانی سے نکال کر محفوظ مقام تک پہنچایا جائے۔پاک فوج کے جوان کشتیوں کے زریعے سے لوگوں کو محفوظ مقام پر منتقل کرنے کے لیے کوشاں ہیں۔سیلاب سے نمٹنے کے لیے ڈپٹی کمشنر کراچی نے پاک فوج سے مدد طلب کی تھی۔تاہم اس ساری صورتحال میں انتظامیہ کی کارگردگی صفر دکھائی دے رہی ہے۔پہلے سے ہی پیشگوئی کر دی گئی تھی کہ بارشوں کا سسٹم بھارت سے پاکستان میں داخل ہو گا،لیکن اس کے باوجود بھی کوئی انتظامات نہ کیے گئے۔

تازہ ترین خبریں