09:07 am
پاکستان کی جانب سے کلبھوشن سے ملاقات کی پیشکش مگر بھارت نے خود اپنے پیروں پر کلہاڑی مار لی

پاکستان کی جانب سے کلبھوشن سے ملاقات کی پیشکش مگر بھارت نے خود اپنے پیروں پر کلہاڑی مار لی

09:07 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت نے اپنے جاسوس کلبھوشن سنگھ یادیو تک قونصلر رسائی کا موقع گنوا دیا۔پاکستان نے واضح کیا تھا کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو سے ملاقات بروز جمعہ سہ پہر تین بجے کرائی جائے گی۔بھارت نے پاکستان کی مخلصانہ پیشکش پر شرائط عائد کیں۔بھارت نے ملاقات کے وقت سے دو گھنٹے پہلے اپنا جواب بھیجا جس میں پاکستانی پیشکش پر اعتراض اٹھائے گئے تھے۔ ذرائع کے مطابق بھارت نے بغیر کسی رکاوٹ اپنے جاسوس تک رسائی مانگی تھی۔لیکن جاسوس تک بغیر رکاوٹ رسائی کسی قانون کے تحت نہیں دی جا سکتی۔بھارتی فرمائش پر جامع مشاورت کے بعد جواب دیا جائے گا۔واضح رہے بھارتی دہشت گرد کلبھوشن یادیوکی قونصلر رسائی سے متعلق بھارت کا جواب آیا تھا۔
جس میں ۔بھارت نے کلبھوشن یادیو تک تنہائی میں رسائی مانگی ہے۔ بھارت کا موقف تھا کہ کسی خوف اور رکاوٹ کے بغیر کلبھوشن یادیو تک رسائی دی جائے۔ گذشتہ روز بھی پاکستان کی جانب سے بھارتی جاسوس اور دہشتگرد کلبھوشن یادیو تک قونصلر رسائی کی باضابطہ پیشکش کے بعد بھارت کا بیان سامنے آیا تھا۔ ترجمان بھارتی دفتر خارجہ رویش کُمار کا کہنا تھا کہ کلبھوشن تک قونصلر رسائی کی تجویز ملی ہے۔ ترجمان بھارتی دفتر خارجہ نے کہا کہ عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کی روشنی میں پاکستان کی تجویز کا جائزہ لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تجویز کا جواب سفارتی ذرائع سے ہی دیا جائے گا۔ تاہم اب بھارت نے کلبھوشن یادیو تک تنہائی میں رسائی مانگ لی ہے۔ یاد رہے کہ گذشتہ روز پاکستان نے بھارتی جاسوس و دہشتگرد کلبھوشن یادیو تک بھارت کو قونصلر رسائی دینے کی باضابطہ پیشکش کی تھی۔ اس حوالے سے ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا تھا کہ بھارتی جاسوس و دہشتگرد کلبھوشن یادیو کو کل قونصلر رسائی دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ، اب صرف بھارت کے جواب کا انتظار ہے۔ ترجمان نے بتایا کہ بھارت کو قونصلر رسائی سے متعلق جمعہ کو ہی آگاہ کر دیا گیا تھا۔ یاد رہے کہ پاکستان نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو قونصلر رسائی دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ 18 جولائی کو جاری کیے جانے والے وزارت خارجہ کے اعلامیہ کے مطابق بھارتی کمانڈر کلبھوشن یادیو کو قونصلر رسائی دی جائے گی۔ کلبھوشن یادیوکو قونصلر رسائی پاکستانی قوانین کے تحت دی جائےگی۔ کلبھوشن کوقونصلررسائی دینےکے لیے طریقہ کارطے کیا جا رہا ہے۔ وزارت خارجہ کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا تھا کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو قونصلر رسائی پاکستانی قوانین کے تحت دی جائےگی۔ کلبھوشن یادیو کو قونصلر رسائی دینے کے لیے طریقہ کار طے کیا جا رہا ہے۔ کلبھوشن یادیو کو ویانا کنونشن کے تحت حاصل حقوق سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ پاکستان نے کلبھوشن یادیو کیس میں بھارت کو عالمی عدالت میں شکست دی تھی۔ عالمی عدالت نے فیصلہ سنایا تھا کہ کلبھوشن یادیو بھارتی دہشت گرد ہے اور اس کا حسین مبارک پٹیل کے نام سے موجود پاسپورٹ بھی اصلی ہے۔ عالمی عدالت نے بھارت کی جانب سے کلبھوشن یادیو کی رہائی کی درخواست مسترد کر دی ، تاہم ویانا کنوینشن کے تحت بھارت کو کلبھوشن یادیو تک قونصلر رسائی کی اجازت بھی دے دی اور پاکستان کو اس حوالے سے اقدامات کرنے کا کہا۔

تازہ ترین خبریں