05:14 pm
’’بلاول بھٹو قابو میں نہیں آرہے، گرفتار کرلیا جائے ‘‘پی پی چیئرمین کی گرفتاری کی تیاری کرلی گئی

’’بلاول بھٹو قابو میں نہیں آرہے، گرفتار کرلیا جائے ‘‘پی پی چیئرمین کی گرفتاری کی تیاری کرلی گئی

05:14 pm

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) معروف صحافی اعزاز سید کا اپنےکالم "اپوزیشن ناکام کیوں ہوئی" میںچیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد ناکام ہونے کے بعد کی صورتحال پر لکھا ہے کہ مجھے چئیرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر ووٹنگ سے قبل بتایا گیا تھا کہ جلد مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے خلاف مقدمات اور گرفتاریوں میں طوفان آئے گا۔اس بار گرفتاریوں کی فہرست میں مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز اور ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب شامل ہیں۔اس کے علاوہ پارٹی کے جنرل سیکرٹری احسن اقبال اور جاوید لطیف بھی شامل ہیں۔
اعزاز سید نے مزید لکھا ہے کہ وفاقی کابینہ کا ایک رکن نیب لاہور کے سربراہ کو قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف کی گرفتاری کے بارے میں اکثر رابطہ کر کے اصرار کرتا ہے یعنی شہباز شریف کی ایک بار پھر گرفتاری عمل میں لائی جائے گی۔گرفتاریوں کا یہ سلسلہ صرف ن لیگ کے خلاف ہی نہیں بلکہ پیپلز پارٹی کے چند رہنماؤں کی گرفتاریاں بھی عمل میں لائی جائیں گی۔اعزاز سید نے مزید لکھا ہے کہ میرے ایک دوست کا کہنا ہے کہ چونکہ نوجوان بلاول بھٹو کسی کے قابو میں نہیں آ رہے۔انہیں بھی سبق سکھانے کی ضرورت ہے جس کے لیے بلاول بھٹو کی گرفتاری عمل میں لائی جائے گی۔نیب میں بلاول بھٹو کے خلاف پارک لین پارتھنن کیس میں کوئی ثبوت نہیں ملا لیکن انہیں جعلی اکاؤنٹس پارک لین کے مرکزی کیس میں گھسیٹا جا سکتا ہے۔کون کب ، کیسے اور کس کیس میں گرفتار ہو گا کسی کو کچھ نہیں پتی لیکن ایسا ہوتا واضح طور پر نظر آ رہا ہے۔واضح رہے بلاول بھٹو حکومت کو کافی ٹف ٹائم دے رہے ہیں۔۔اسی حوالے سے صحافی نے آج کالم میں دعویٰ بھی کیا ہے کہ جلد مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے خلاف مقدمات اور گرفتاریوں میں طوفان آئے گا۔