03:27 pm
 بھارت کی جانب سے کشمیر پر کلسٹر بموںکے استعمال کی شدید مذمت کرتا ہوں، احسن اقبال

بھارت کی جانب سے کشمیر پر کلسٹر بموںکے استعمال کی شدید مذمت کرتا ہوں، احسن اقبال

03:27 pm

بدوملہی(آن لائن)پاکستان مسلم لیگ ن کے جنرل سیکرٹری اورسابق وزیرداخلہ احسن اقبال چوہدری نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے کشمیر پر کلسٹر بموں کے استعمال کی شدید مذمت کرتا ہوںپاکستان مسلم لیگ ن اور متحدہ اپوزیشن بھارت کے اس عمل کی شدید مذمت کرتے ہیں اور حکومت وقت سے مطالبہ کرتے ہیں بھارت کی جانب سے نئی دہشت گردی کی لہر کو روکنے کیلئے اور عالمی برداری کو بیدار کرنے کیلئے فوری سفارتی اقدامات اٹھائے جائیں۔
میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ اس مسئلہ پر قومی اسمبلی کا اجلاس بلایا جائے تاکہ ہم کشمیریوں کو پیغام دے سکیںکہ پوری پاکستانی قوم ان کی پشت پر کھڑی ہے کشمیر کا مسئلہ دراصل تقسیم ہند کا ادھورا ایجنڈا ہے جب تک کشمیر کے عوام کو آزادانہ منصفانہ اور شفاف انداز میں حق خود ارادیت نہیں دیا جاتا جس سے وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کریں اس خطے میں مستقل امن قائم نہیں ہوسکتا لہذ ا پاکستان ،بھارت اور کشمیر تینوں مسئلہ کشمیر کے فریق ہیں عالمی برادری کا فرض ہے کہ وہ اس بہتے ہوئے خون کوروکنے کیلئے جو مسلمانوں کا بھارت کی فوج اور اداروں کے ہاتھوں ہو رہا ہے فوری ایسے اقدامات اٹھائے جس سے بھارت انسانی حقوق کی خلاف وردی سے باز آسکے اگر عالمی ضمیر نہ جگا تو خطے میں کشیدگی بڑھنے میں زیادہ دیر نہیں لگے گی کیونکہ مسئلہ کشمیر کی وجہ سے ہی اس خطے میں تین جنگیں ہو چکی ہیں۔ کشمیر کے حوالے سے سیکورٹی کونسل کا اجلاس بلانا چاہیے جو اس خطے کے امن کو بحال کرنے کا جائزہ لے۔سینٹ الیکشن کے حوالے سے مسلم لیگ ن کے جنرل سیکرٹری نے کہا کہ سینٹ میں جو عدم اعتماد کی تحریک پیش ہوئی اس میں اپوزیشن کو اخلاقی فتح ہوئی اور حکومت اخلاقی طور پہ دیوالیہ پن کا شکار ہوئی سینٹ میں 64سینٹرز نے کھڑے ہو کر عدم اعتماد کی تحریک پیش کرنے کے لئے ا پنا ووٹ پوری قوم کے سامنے گنوایا لیکن جب وہ خفیہ رائے شماری میں ووٹ گیا تو صرف پچاس نکلے صاف ظاہر ہے کہ ان 14اراکین کو بلیک میلنگ ،دھونس یا لالچ کے ذریعے خریدا گیا ہے انہوں نے کہا کہ جن چودہ سینٹرز نے وفا داری تبدیل کی ہے یہ پاکستان جمہوریت کے ’’میر صادق اور میر جعفر‘‘ ہیں،سیاسی جماعت کسی سیاسی کارکن کی ’’ماں‘‘ ہوتی ہے اور اپنی سیاسی جماعت کے ساتھ بے وفائی کرنے کا مقصد یہ ہے کہ وہ شخص اپنی ماں نے ساتھ غداری کرتا ہے یہ سیاست کے اندر گھناونا ترین جرم ہے جس کے وہ چودہ افراد مرتکب ہوئے نہیں اس حوالے سے مسلم لیگ ن اور دیگر اپوزیشن نے اپنی انکوئری کمیٹیاں بنائیں ہیں جو اس بات کی چھان بین کریں گی کہ وہ کون سے کالی بھیڑیں ہیںجنہوں نے اتنا مکروہ فعل سرانجام دیا ہے احسن اقبال نے کہا ہوکہ جن پچاس سینٹرز نے تمام دبائو اور لالچ کو مسترد کرتے ہوئے اپنے سیاسی ضمیر کی روشنی میںاپوزیشن کی قردار کی حمایت میں ووٹ دیا ہے میں انہیں سلام کرنا چاہتا ہوں،احسن اقبال نے کہا کہ ن لیگ کی حکومت کے پانچ سال بہتری اور برتری کے سال تھے کھبی پانچ سال تسلسل جھوٹ اور فراڈ سے قائم نہیں کیا جا سکتااحسن اقبال نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ اس حکومت کو معیشت کی الف،ب کا بھی نہیں پتہ،بلکہ یہ حکومت معیشت کے قاعدے کا پرائمری بلکہ کچی جماعت کا قائدہ بھی نہیں پڑھ سکتی اور جتنی دیر یہ حکومت رہے گی یہ پاکستان کی معیشت او ر سلامتی کیلئے خطرہ رہے گی۔

تازہ ترین خبریں