10:45 am
عید سے پہلے مریم نواز کو گرفتار کرنا بہت ضروری تھا عید کے دن وہ انڈیا پر حملے کا اعلان کرنے والی تھیں

عید سے پہلے مریم نواز کو گرفتار کرنا بہت ضروری تھا عید کے دن وہ انڈیا پر حملے کا اعلان کرنے والی تھیں

10:45 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کو اب سے کچھ دیر قبل نیب نے کوٹ لکھپت جیل کے باہر سے گرفتار کیا جہاں وہ اپنے والد نواز شریف سے ملاقات کے لیے آئی تھیں۔ مریم نواز کو چودھری شوگر ملز کیس میں گرفتار کیا گیا۔ مریم نواز کی گرفتاری پر معروف صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے حکومت پر طنز کرتے ہوئے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ عید سے پہلے مریم نواز کو گرفتار کرنا بہت ضروری تھا عید کے دن وہ انڈیا پر حملے کا اعلان کرنے والی تھیں۔
جبکہ سینئیر صحافی و تجزیہ کار صابر شاکر نے مریم نواز کی گرفتاری پر رد عمل دیتے ہوئے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا کہ مریم نواز منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار چار کروڑ اسی لاکھ ڈالر کی ایک اور 50 لاکھ ڈالر کی دوسری TT ، اورنہ جانے کیا کیا!!! انہوں نے کہا کہ کرپٹ مافیا نہیں بچے گا۔ خیال رہے کہ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی گرفتاری کے بعد نواز شریف کے بھتیجے اور مرحوم عباس شریف کے صاحبزادے یوسف عباس کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔ نیب نے مریم نواز اور یوسف عباس کو چودھری شوگر ملز کیس میں گرفتار کیا ۔ چودھری شوگر ملز کیس میں مریم نواز پر منی لانڈرنگ کے الزامات ہیں جس کے ثبوت و شواہد نیب نے حاصل کر لیے ہیں۔ جبکہ یوسف عباس سے متعلق یہ خبر موصول ہوئی تھی کہ انہیں اس منی لانڈرنگ سے متعلق تمام معلومات حاصل ہیں اور انہوں نے مریم نواز کے خلاف ثبوت بھی نیب کو فراہم کیے ہیں۔ جبکہ دوسری جانب کچھ صحافیوں نے مریم نواز کی گرفتاری پر موجودہ حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ حکومت کو مسئلہ کشمیر پر توجہ دینے کی ضرورت ہے لیکن حکومت اس وقت اپوزیشن رہنماؤں کو گرفتار کرنے میں مصروف ہے۔

تازہ ترین خبریں