03:39 pm
بھارتی افواج نے پیلٹ گن سے کشمیریوں کو نابینا کر نا شروع کر دیا،خواتین پر بھی گولیاں برسائی جانے لگی

بھارتی افواج نے پیلٹ گن سے کشمیریوں کو نابینا کر نا شروع کر دیا،خواتین پر بھی گولیاں برسائی جانے لگی

03:39 pm

سری نگر (نیوزڈیسک)بھارتی افواج نے پیلٹ گن سے کشمیریوں کو بے نور کر نا شروع کر دیا ہے۔اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وادی کشمیر پر قابض بھارتی افواج نے ظلم و ستم کی انتہا کرتے ہوئے معصوم اور بے گناہ کشمیریوں کے خلاف بدترین، ممنوعہ اور بد نام زمانہ پینٹس کا بہیمانہ استعمال ایک بار پھر شدت سے شروع کر دیا ہے۔جس کا بنیادی مقصد کشمیریوں کی آئندہ نسل کو بے نور کر نا
اور دیگر متعلقہ افراد میں خوف و ہراس پھیلانا ہے ۔پیلٹ گنز کے اندھا دھند استعمال پر اس سے قبل پوری دنیا میں بھارت کی قابض افواج کی شدید مذمت کی گئی تھی۔ خود بھارت میں مقیم انسان دوست اور سول سوسائٹی نے بھی سخت ردعمل کا اظہار کیا تھا۔لیکن مختلف بہانوں سے جنونی اور انتہا پسند ہندو سرکار اپنے مظالم کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔وادی چنار کے رہائشی 16 سالہ اسرار خان بھی پینٹس کا نشانہ بن گئے۔گیارہویں جماعت کے اسرار خان کو اس وقت بھارت کی قابض فوج نے پیلٹ گنز کا نشانہ بنایا جس وقت وہ اپنے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ کھیل میں مصروف تھا۔عرب نشریاتی دارے الجزیرہ کے مطابق بھارتی افواج گھروں میں گھس کر لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے اور اس کے ظلم و ستم سے بھی وہ محفوظ نہیں ہیں جو زخمی ہوکر ایمبولینسوں کے ذریعے اسپتال جا رہے ہیں۔جبکہ کہ نشریاتی ادارے دی انڈیپنڈنٹ کے مطابق بھارتی افواج کشمیر میں خواتین پر بھی گولیاں برسا رہی ہے۔ بھارت کی جانب سے کشمیر کی خصوصی حیثیت کے حوالے سے آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد سخت عوامی ردعمل سے بچنے کے لیے لگائے گئے کرفیو اور مواصلاتی قدغن کی وجہ سے مقبوضہ کشمیر میں نظام زندگی مفلوج ہو کر رہ گیا ہے۔ گزشتہ روز مقبوضہ وادی کے مختلف علاقوں میں ہزاروں افراد کرفیو توڑ کر سڑکوں پر نکلے، بھارت مخالف نعرے لگائے اور قابض افواج پر پتھراؤ کیا۔مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے بھارتی فوج نے پیلٹس گنوں، فائرنگ اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کیا، جس سے چھ کشمیری شہید اور سو سے زائد زخمی ہو گئے۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسیوں کے مطابق بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد مقبوضہ کشمیر میں چوتھے روز بھی کرفیو جاری ہے جبکہ مواصلاتی نظام معطل، تعلیمی ادارے اور کاروباری مراکز بند ہیں۔

تازہ ترین خبریں