12:11 am
سکیورٹی پر مامور اہلکاروں پر تشدد مہنگا پڑگیا، عظمیٰ بخاری سمیت 8 لیگی رہنمائوں کیخلاف سخت قدم اٹھالیا گیا

سکیورٹی پر مامور اہلکاروں پر تشدد مہنگا پڑگیا، عظمیٰ بخاری سمیت 8 لیگی رہنمائوں کیخلاف سخت قدم اٹھالیا گیا

12:11 am

لاہور (نیوز ڈیسک)عظمیٰ بخاری سمیت 8 لیگی رہنما مشکل میں پھنس گئے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ احتساب عدالت پیشی پر ن لیگ کے رہنماؤں اور پولیس کےدرمیان جھڑپ ہوئی جس پر اب پولیس نے کاروائی کا فیصلہ کر لیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اسلام پورہ پولیس نے اس حوالے سے ایف آئی آر بھی رج کر لی ہے جس میںعظمیٰ بخاری، توصیف شاہ اور مہرمحمود احمد سمیت 8 ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے
ا سکے علاہ 150 نامعلوم افراد کے خلاف بھی مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔لیگی رہنماؤں سمیت کارکناکنوں کے خلاف مقدمہ سب انسپکٹر دلشاد کی مدعیت میں درج کیا گیا۔مقدمے میں توڑ پھوڑ اور املاک کو نقصان پہنچانے کی بھی دفعات درج ہیں۔ایف آئی آر کے متن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ملزمان نے سیکیورٹی پر مامور اہلکاروں کو تشدد کا نشانہ بنایا۔پتھراؤ سے کانسٹیبل نثار کے سر پر گہری چوٹ آئی۔ گذشتہ روز مریم نواز گزشتہ روز دلیگی رہنمائوں اور کارکنان کے ہمراہ عدالت کی جانب جارہی تھی کہ ایک مرد پولیس اہلکار نے آگے بڑھ کر عظمیٰ بخاری کو روکنے کی کوشش کی جس پر انہوں نے اسے تھپڑ جڑ دیا۔خیال ریے گذشتہ روز پاکستان مسلم لیگ (ن) کی سینئر نائب صدر مریم نواز سے اظہار یکجہتی کے لئے احتساب عدالت کے باہر پہنچنے والی (ن) لیگی رکن پنجاب اسمبلی عظمیٰ بخاری پولیس دھکم پیل اور غیر مناسب سلوک کی وجہ سے بے ہوش ہو گئیں جنہیں ریسکیو 1122 نے فوری طبی امداد کے لئے ہسپتال منتقل کیا۔ بیہوش ہونے سے قبل عظمیٰ بخاری نے پولیس کی تمام تر روکاوٹوں کے باوجود بطور رکن اسمبلی اپنے استحقاق کو مد نظر رکھتے ہوئے احتساب عدالت میں جانے کی کوشش کی تو ایک مرد پولیس اہلکار اچانک عظمیٰ بخاری کے سامنے آیا۔جس نے غیر مناسب طریقے سے رکن پنجاب اسمبلی کو روکا تو عظمیٰ بخاری نے پولیس اہلکار پر تھپڑ دے مارا اور اس دھکم پیل کے دوران ٹینشن کا شکار ہو کر بیہوش ہو گئیں۔ عظمیٰ بخاری نے متعلقہ پولیس اہلکار کے خلاف مقدمہ درج کروانے اور پنجاب اسمبلی میں تحریک استحقاق پیش کرنے کا اعلان کیا ہے۔

تازہ ترین خبریں