01:36 pm
ابھی نندن کی چھترول کا بدلہ لینے کیلئے پاک فوج کے اہم شخص کو شہید کرنے کا دعویٰ

ابھی نندن کی چھترول کا بدلہ لینے کیلئے پاک فوج کے اہم شخص کو شہید کرنے کا دعویٰ

01:36 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)حال ہی میں لائن آف کنٹرول پر بھارتی فورسز کی جانب سے کی جانے والی بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں ایس ایس جی کے نائب صوبیدار احمد خان نے شہادت کا رتبہ حاصل کیا، جس پر بھارتی میڈیا نے خبر چلائی کہ شہید احمد خان ابھی نندن کو پکڑنے والے کمانڈرز میں شامل تھا۔ جبکہ ان خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ ذرائع کے مطابق ابھی نندن کو مشتعل ہجوم سے بچانے والے کمانڈر کی بی داڑھی تھی اور شہید احمد خان نے بھی داڑھی رکھی ہوئی تھی، ممکنہ طور پر بھارتی میڈیا نے بغیر تحقیق کے صرف داڑھی کی بنیاد پر ہی اتنا بڑا دعویٰ کر دیا ہے۔جس سے بھارتی میڈیا کا ایک اور جھوٹ بے نقاب ہو گیا ہے۔
جھوٹی اور بے بنیاد خبریں اور دعوے کرنے پر بھارتی میڈیا کو کافی تنقید کا سامنا بھی ہے۔ یاد رہے کہ مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں 14 فروری کو ایک کار خود کش دھماکے میں 40 بھارتی فوجی ہلاک ہوئے تھے جس کا الزام بھارت نے براہ راست پاکستان پر عائد کیا تھا۔ پلوامہ واقعے کے بعد صورتحال کشیدہ ہوئی اور 26 فروری کی رات بھارتی فضائیہ نے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کی جس پر پاک فضائیہ کی بروقت جوابی کارروائی پر بھارتی طیارے بالاکوٹ کے قریب نصب ہتھیار پھینکتے ہوئے بھاگ نکلے تھے۔ جس کے بعد بدھ کی صبح 27 فروری کو پاک فضائیہ نے بھارت کو سرپرائز دیتے ہوئے بھارت کے دو طیارے مار گرائے جبکہ ایک بھارتی پائلٹ ونگ کمانڈر ابھی نندن کو بھی گرفتار کر لیا گیا تھا۔ پاک فوج نے ابھی نندن کو مشتعل ہجوم سے بچایا اور زخمی حالت میں حراست میں لے لیا تھا جس کے بعد اسے طبی امداد دی گئی اور بھارتی پائلٹ کی ایک ویڈیو بھی سامنے آئی جس میں اسے چائے کی چُسکیاں لیتے دیکھا گیا تھا۔