05:36 pm
پاکپتن،اوکاڑہ اورساہیوال میں ہیلتھ کارڈ سکیم،80کروڑ کے 7پراجیکٹس کا افتتاح

پاکپتن،اوکاڑہ اورساہیوال میں ہیلتھ کارڈ سکیم،80کروڑ کے 7پراجیکٹس کا افتتاح

05:36 pm

اسلام آباد (روزنامہ اوصاف)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے پاکپتن،اوکاڑہ اورساہیوال کے لئے صحت انصاف کارڈ سکیم کا افتتاح کردیا۔وزیراعلیٰ نے ساہیوال ڈویژن کیلئے 80کروڑ روپے کے7میگاپراجیکٹس اورپولیس کمپلینٹ سیل، کمپیوٹرائزڈ ڈرائیونگ لائسنسنگ لیب،پکار 15کنٹرول روم کا افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال ساہیوال کی ٹیچنگ ہسپتال اپ گریڈ یشن سمیت 1ارب19کروڑ روپے کے تین میگاپراجیکٹس کا بھی اعلان کیا
۔وزیراعلیٰ نے سرکٹ ہاؤس ساہیوال پہنچنے پر چیچہ وطنی کی ماڈل کیٹل مارکیٹ،قائداعظم کرکٹ سٹیڈیم ساہیوال کی تعمیر نو اورفلڈ لائٹس کی تنصیب،کمیر میں گورنمنٹ بوائز ڈگری کالج،میونسپل کمیٹی آفس،آر ایچ سی میں ضروری سہولتوں کی فراہمی اوررینالہ خورد میں 60بیڈ کے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے منصوبوں کا افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ نے سرکٹ ہاؤس میں موسم برسات کی شجرکاری مہم کے تحت پودا لگایا اورمہم کی کامیابی کیلئے دعا کی۔بعد ازاں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے 3 اضلاع کیلئے صحت انصاف کارڈ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں عوام کو علاج معالجے کی معیاری سہولتوں سے محروم رکھا گیا۔ صحت انصاف کارڈ کے ذریعے سفید پوش عزت و احترام سے نجی ہسپتالوں میں مفت علاج کراسکیں گے۔ نجی ہسپتالوں میں صحت انصاف کارڈ ہولڈر کا علاج، ادویات اور ٹیسٹ وغیرہ فری ہوں گے، بل حکومت ادا کرے گی۔صحت انصاف کارڈ کے مریض کو آمد و رفت کیلئے کرایہ بھی دیا جائے گا۔ صحت انصاف کارڈ کے ذریعے 8 امراض کا مفت علاج اور فری فالو اپ ہوگا۔ صحت انصاف کارڈ کے ذریعے ماں اور بچے کو بھی علاج کی خصوصی سہولت حاصل ہوگی۔ 24 اضلاع میں 67 لاکھ خاندان صحت انصاف کارڈ سے مستفید ہو رہے ہیں۔ ساہیوال کی 25 فیصد، اوکاڑہ کی 29 فیصد اور پاکپتن کی 27 فیصد آبادی کو صحت انصاف کارڈ دیئے جا رہے ہیں۔ ساہیوال ڈویژن میں 20 لاکھ سے زائد افراد کو صحت انصاف کارڈ دیا جا رہا ہے۔ سرکاری ملازمین کو بھی مرحلہ وار صحت انصاف کارڈ دیئے جائیں گے۔ علماء، مشائخ، خطیب اور مدارس کے طلبہ کو ہیلتھ کارڈ دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ساہیوال میں کمپیوٹرائزڈ ڈرائیونگ لائسنسنگ لیب، پکار 15 کنٹرول روم سے عوام کو سہولت ہوگی۔ پولیس کمپلینٹ سیل کے قیام سے امن و امان اور پولیس سے متعلق شکایات کو جلد حل کیا جاسکے گا۔

تازہ ترین خبریں