12:10 pm
مردان میں ننھی اقراء کے قتل کا ڈراپ سین ،بچی کی قاتل 13اور 18سالہ دو بہنیں نکلیں

مردان میں ننھی اقراء کے قتل کا ڈراپ سین ،بچی کی قاتل 13اور 18سالہ دو بہنیں نکلیں

12:10 pm

مردان (مانیٹرنگ ڈیسک) مردان میں چار سالہ بچی اقرا کے قتل کا ڈراپ سین ہو گیا ۔ تفصیلات کے مطابق مردان میں چار سالہ بچی اقرا کے قتل میں ہمسائے دار دو بہنیں ملوث نکلیں۔ اس حوالے سے ڈی پی او مردان نے کہا کہ قتل میں ملوث دونوں لڑکیوں نے اعتراف جُرم کر لیا ہے۔ دونوں لڑکیوں کا چار سالہ بچی اقرا کی والدہ سے جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد انہوں نے غصے میں اقرا کی جان لے لی۔ قتل کرنے والی دو ہمسایہ دار بہنوں کی عمریں 13 اور 18 سال ہیں۔ ڈی پی او مردان نے بتایا کہ دونوں بہنوں نے اعتراف جُرم کر لیا ہے۔ یاد رہے کہ مردان ميں چار سالہ بچی اقرا کو تشدد کرکے قتل کر دیا گیا تھا۔
اقرا کے اہل خانہ نے بتایا تھا کہ بچی گھر سے مہندی لينے گئی لیکن واپس نہ آئی، گھروالوں نے سب جگہ تلاش کیا جس کے پانچ روز بعد بچی کی لاش کھتیوں سے برآمد ہوئی۔ اقرا کے اہل خانہ نے اعلیٰ افسران سے درخواست کی تھی کہ ملزمان کو جلد سے جلد پکڑ کرسخت سزا ديں۔ چار سالہ اقرا کی پوسٹ مارٹم رپورٹ سے بچی کے نازک اعضاء پر تشدد کی تصدیق ہوئی تھی جس کی وجہ سے قتل سے قبل بچی سے زیادتی کا شبہ ظاہر کیا گیا تھا۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق بچی کے سر اور کمر پر چوٹیں لگی ہیں، ہاتھ پر زخم کے نشان ہیں اور ایک ہاتھ کی اُنگلی بھی ٹوٹی ہوئی تھی جبکہ جلد پر بھی شدید زخم کے نشان بھی ہیں۔ یاد رہے کہ عید سے ایک روز قبل مردان کے نواحی علاقہ جانباز نرے کلے کے رہائشی رحمت اللہ کی چار سالہ بیٹی اقرا مہندی لینے دوکان گئی اور پھر واپس نہیں آئی جس پر اس کی تلاش شروع کردی گئی تاہم ناکامی پر تھانہ صدر میں رپورٹ درج کروا دی گئی تھی۔ ڈی پی او نے اس معاملے پر کہا تھا کہ ہم پروفیشنل طریقے سے اس کیس کی تحقیقات کریں گے۔ جس کے بعد ڈی پی او مردان سجاد خان نے تھانہ صدر کے علاقہ جانباز نرے میں چار سالہ اقرا قتل کیس کی تحقیقات کے لئے ایس پی انوسٹی گیشن کی سربراہی میں جے آئی ٹی تشکیل بھی تشکیل دی تھی۔

تازہ ترین خبریں