01:19 pm
 بھارتی آرمی چیف کے بعد بھارتی گجرات کے وزیر اعلیٰ نے بھی بڑھک مار دی

بھارتی آرمی چیف کے بعد بھارتی گجرات کے وزیر اعلیٰ نے بھی بڑھک مار دی

01:19 pm

اسلام آبا(مانیٹرنگ ڈیسک) گجرات کے وزیر اعلی وجے روپانی کا کہنا ہے کہ پاکستان کو آزاد کشمیر سے محروم ہونے کے لئے تیار رہنا چاہئے۔تفصلات کے مطابق بھارتی آرمی چیف کی بھڑکوں کے بعد اب وہاں کے وزراء کی جانب سے بھی دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔بھارتی وزراء کی جانب سے مضحکہ خیز دعوے کیے جا رہے ہیں۔ بھارتی میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیر اعلی وجے روپانی نے اتوار کے روز پاکستان کو وارننگ دیتے ہوئے کہا
کہ پاکستان کو آزاد کشمیر کو کھونے کے لئے تیار رہنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ آرٹیکل 370 کو کالعدم کر دیا گیا ہے جس کے بعدپاکستان کے زیر انتظام کشمیر بھی ہمارا ہے۔متحدہ ہندوستان کا خواب پورا کرنے کے لئے ہم آزاد کمشیر کی طرف بڑھنے کے لئے تیار ہیں۔ واضح رہے اس سے قبل ایک میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے مابین مذاکرات ہونے کا امکان اب معدوم ہو گیا ہے جس کی وجہ بھارت کی جانب سے مسلسل ہٹ دھرمی کے مظاہرے اور مذاکرات کے معاملے پر بھارت کی غیر سنجیدگی کو قرار دیا گیا ۔ پاک بھارت مذاکرات کے معاملے پر بھارتی حکمرانوں اور بھارتی افواج کے سربراہان کے زہر اُگلتے بیانات نے بھی منفی کردار ادا کیا۔ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی جس پر پاکستان نے خوب احتجاج کیا لیکن بھارت نے اس معاملے پر تحمل اور سمجھداری سے کام لینے کی بجائے آزاد کشمیر پر اپنی گندی نظر ڈالی جس پر بھارت کے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے بھی بیان دیا کہ پاکستان سے مذاکرات مقبوضہ پرنہیں آزاد کشمیر پرہوسکتے ہیں۔ بھارتی وزیر داخلہ کے اس بیان سے پیدا ہونے والے کشیدہ صورتحال میں کمی لانے کی بجائے بھارتی فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت نے بھی ایسی ہی ایک بڑھک مار ی تھی جس پر بھارتی میڈیا نے خوب بڑھ چڑھ کر کوریج کی۔ بھارتی فوج کے سربراہ جنرل بپن روات نے اپنے بیان میں کہاکہ آزاد کشمیر پر صرف بھارتی حکومت کے حکم کا انتظار ہے ورنہ آرمی کو تیار ہے۔ بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ جنرل بپن راوت نے یہ بیان دے کر پاکستان کو ایک پیغام بھجوادیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان میں موجود آزاد کشمیر پر بھارتی حکومت کو فیصلہ کرنے کی ضرورت ہے، بھارتی حکومت جب بھی فیصلہ کرے گی فوج تیار ہے۔

تازہ ترین خبریں