01:37 pm
 روس کی ہمراہی میں پاک فوج حرکت میں آگئی

روس کی ہمراہی میں پاک فوج حرکت میں آگئی

01:37 pm

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک) چینی اور پاکستانی خوفناک طیاروں کی اڑانوں کے ساتھ ہی روس کی ہمراہی میں پاک فوج حرکت میں آگئی، ہندوستان پر لرزہ طاری ۔۔۔پاکستان نے روس میں کثیر ملکی فوجی مشقوں میں شرکت کی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق آئی ایس پرآر کا کہنا ہے کہ فوجی مشقیں ایک ہفتے تک جاری رہیں گی۔پاکستان سمیت شنگھائی تعاون تنظیم رکن ممالک مشقوں کا حصہ ہیں۔پاکستان سمیت تمام رکن ممالک کے اعلیٰ فوجی حکام نے افتتاحی تقریب میں شرکت کی ہے۔
کثیر ملکی فوجی مشقیں کو سینٹر 2019 کا نام دیا گیا ہے۔ فوجی مشقیں شنگھائی تعاون تنظیم میں شامل ممالک کی فوجیوں پر مشتمل ہیں ۔جب کہ دوسری جانب گذشتہ دنوں دوست اور برادر ممالک پاکستان اور چین کی تاریخی فضائی مشقیں جاری رہیں۔ شاہین نامی فضائی مشقیں پاک فضائیہ اور چینی فضائیہ کے اشتراک سے منعقد کی جاتی ہیں۔ یہ مشقیں سالانہ بنیادوں پر منعقد کروائی جاتی ہیں۔ پاکستان اور چین کی مشترکہ شاہین مشقوں کا اغاز 2001 میں ہوا تھا۔ تب سے ایک سال یہ مشقیں پاکستان جبکہ اگلے سال چین میں ہوتی ہیں۔ ان مشقوں کے دوران پاکستان اور چین دونوں ممالک کے جنیگ طیارے شامل ہوتے ہیں اور دونوں ممالک کی فضائیہ کے پائلٹس اور دیگر عملہ اپنا تربیتی معیار بہتر کرنے پر توجہ دیتے ہیں۔ دونوں ممالک کے درمیان یہ آٹھویں سالانہ مشقیں ہیں اسی لیے انہیں شاہین 8 کا نام دیا گیا ۔ مشقوں کے انعقاد سے بالعموم دونوں ملکوں کے درمیان قریبی تعلقات بڑھانے اور بالخصوص دونوں ملکوں کی فضائیہ کے باہم ملکر کام کرنے کا طریقہ کار وضع کرنے میں بھی مدد ملے گی ۔
بتایا گیا ہے کہ خطے کی حالیہ کشیدہ صورتحال کے باعث دونوں ممالک کی فضائیہ اس مرتبہ حقیقی جنگی ماحول میں ان مشقوں کا انعقاد کر رہی ہے۔ان مشقوں کے دوران جنگی صورتحال سے نمٹنے کی مکمل تیاری کی جا رہی ہے۔ اسی لیے ان مشقوں نے بھارت کو خوب پریشان کر رکھا ہے۔ واضح رہے کہ پاکستان اور چین کی مشترکہ فضائی مشقوں کا انعقاد ایک ایسے وقت میں ہوا تھا جب پاکستان اور بھارت مسئلہ کشمیر کے باعث جنگ کے دہانے پر کھڑے ہیں۔

 

تازہ ترین خبریں