02:49 pm
اگر مقبوضہ کشمیر صرف پاکستان کا مسئلہ ہے تو پھر آئل تنصیبات پر حملہ بی صرف سعودی عرب کا مسئلہ ہے

اگر مقبوضہ کشمیر صرف پاکستان کا مسئلہ ہے تو پھر آئل تنصیبات پر حملہ بی صرف سعودی عرب کا مسئلہ ہے

02:49 pm

اسلام آبا د(مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کیے جانے کے بعد پاکستان نے ہر فورم پر بھارتی مظالم کے خلاف آواز اُٹھائی اور امت مسلہ کی بھی توجہ اس جانب مبذول کرواتے ہوئے اپیل کی کہ مظلوم کشمیریوں کے حق میں آواز اُٹھائی جائے لیکن کسی مسلم ملک نے کشمیریوں کے حق میں نہ تو باقاعدہ آواز اُٹھائی اور نہ ہی اس حوالے سے باقاعدہ احتجاج کیا گیا۔اور تو اور او آئی سی کے اجلاس میں بھی مقبوضہ کشمیر کے معاملے کو زیادہ اہمیت نہیں دی گئی تھی
اور یہ تاثر دیا گیا تھا کہ مقبوضہ کشمیر اُمت مسلمہ کا نہیں بلکہ پاکستان کا مسئلہ ہے۔ تاہم اب سعودی عرب کی آئل تنصیبات پر حملوں کے بعد صارفین نے زیادہ مذمت کرنے والوں کو آڑے ہاتھوں لے لیا ہے۔ سوشل میڈیا صارفین نے کہا کہ اگر مقبوضہ کشمیر صرف پاکستان کا مسئلہ ہے تو آئل تنصیبات پر حملے بھی صرف سعودی عرب کا مسئلہ ہیں اور اس پر زیادہ توجہ دینے یا اس کی زیادہ مذمت کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ جب کوئی مسلم ملک اپنے مسلمان بھائیوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف آواز نہیں اُٹھا سکتا تو ہمیں بھی چاہئیے کہ ہم بھی ان کے معاملات کو انہی تک چھوڑ دیں ۔ اس حوالے سے سینئیر اینکر پرسن جنید سلیم نے بھی مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں اس مؤقف کی تائید کی اور کہا کہ عرب ممالک کے بقول کشمیر اگر صرف پاکستان کا مسئلہ ہے، اور اُمتِ مُسلمہ کا مسئلہ نہیں ہے تو پھر سعودی آئل ریفائنریز پر حملہ بھی سعودی عرب کا اپنا مسئلہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی آئل ریفائنریز پر حملوں کو اُمت کا مسئلہ بنا کر پاکستان کو اُس میں مت گھسیٹا جائے۔

تازہ ترین خبریں