03:26 pm
تعریف وہ جو غیر بھی کریں

تعریف وہ جو غیر بھی کریں

03:26 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کی تقریر نے جہاں پاکستان سمیت دنیا بھر پر سحر طاری کر دیا ہے۔وہیں عالمی رہنماؤں کی جانب سے انہیں خوب سراہا بھی جا رہا ہے۔وزیراعظم کی تقریر پر تبصرے آنے کا سلسلہ تا حال جاری ہے، پاکستان مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی مولانا غیاث الدین نے بھی اقوام متحدہ میں وزیراعظم عمران خان کی تقریر کی تعریف کر دی۔اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ لیگی ایم پی اے مولانا غیاث الدین کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے کشمیریوں کامقدمہ بہترین انداز میں پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ عمران خان اسلامی دنیا کے لیڈر بن گئے ہیں۔جب کہ ن لیگ کے رہنما خواجہ آصف نے کہا
کہ وزیراعظم عمران خان کواقوام متحدہ یاد دلانا چاہئیے تھا کہ ایسٹ تیمور اور ساؤتھ سوڈان کا مسئلہ تو حل ہو گیا لیکن 72 سال ہو گئے نہ فلسطینیوں کو نہ کشمیریوں کو انصاف ملا۔ حکومت کو خارجہ پالیسی کا قبلہ درست کرنا چاہئیے۔ جب کہ مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا کہ کشمیر کا مقدمہ اقوام متحدہ میں اُجاگر کرنا خوش آئند ہے۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے سخت سفارتکاری کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے عمران خان نے ابھی تک ایک ملک کا دورہ بھی نہیں کیا۔ دیکھنا ہو گا کہ جتنے زور سے تقریر کی گئی اس کا نتیجہ کیا نکلتا ہے۔اگر حکومت کوئی ٹھوس اقدامات اُٹھائے گی تو ساتھ دیں گے۔ مسئلہ کشمیر پر عوام کو یوٹرن نہیں لینے دیں گے۔ خیال رہے کہ وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان عمران خان نے گذشتہ روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس سے خطاب کیا اور کشمیریوں کے حق میں آواز اُٹھائی۔وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں مودی حکومت کے کشمیر میں ڈھائے جانے والے مظالم پر بات کی۔ وزیراعظم نے جنرل اسمبلی میں بھارت سے مطالبہ کیا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر سے 50 روز سے زائد جاری کرفیو اٹھائے۔

تازہ ترین خبریں