02:08 pm
ان 2دنوں میں پورے پاکستان میں تمام دوکانیں ، بازار سب کچھ بند رہے گا

ان 2دنوں میں پورے پاکستان میں تمام دوکانیں ، بازار سب کچھ بند رہے گا

02:08 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ان 2دنوں میں پورے پاکستان میں تمام دوکانیں ، بازار سب کچھ بند رہے گا ، شٹر ڈائون ہڑتال کا اعلان کر دیا ۔۔۔تاجر برادری نے 28 اور 29 اکتوبر کو ملک بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملک بھر کے تاجر لازمی سیلز ٹیکس رجسٹریشن، اشیا کی خرید و فروخت کے لیے شناختی کارڈ کی کاپی فراہم کرنے کی شرط سمیت مختلف مسائل پر ڈیڈلاک برقرار رہنے کے باعث فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر) ہیڈ کوارٹرز کے باہر مظاہرے میں شرکت کے لیے اسلام آباد میں احتجاج کیا۔احتجاج کے دوران مظاہرین کوریڈ زون میں داخل ہونے سے روکا گیا۔
تاجر برادری کی جانب سے ملک بھر میں سٹر ڈاؤن ہڑتال کرنے کا فیصلہ آل پاکستان انجمن تاجران ( اے پی اے ٹی) نے حکومت اور تاجروں کے درمیان مذاکرات کا ایک اور دور ناکام ہونے کے بعد کیا گیا۔ تاجروں کو احتجاج کے دوران اسلام آباد انتظامیہ کی جانب سے یقین دہانی کروائی گئی تھی کہ ایف بی آر کے سینئر عہدیدار سے تاجروں کے مطالبات سننے کی درخواست کی جائے گی جس کے بعد انہوں نے پولیس کی رکاوٹیں عبور کرنے کی کوشش نہیں کی۔ اس فیصلے سے تاجروں اور حکومت کے درمیان مذاکرات کی بحالی کا راستہ آسان ہوا۔ چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کی کراچی میں موجودگی کی وجہ سے مذاکرات میں وفاقی وزیر برائے معاشی امور حماد اظہر نے حکومتی ٹیم کی نمائندگی کی اور آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی صدر اجمل بلوچ اور جنرل سیکریٹری نعیم میر نے تاجروں کی نمائندگی کی۔ مذاکرات کے بعد تاجروں کے نمائندگان نے اعلان کیا کہ حکومت قومی شناختی کارڈ کی شرط سے دستبردار ہونے پر ہچکچاہٹ کا شکار ہے۔ اجمل بلوچ کا مذاکرات کے حوالے سے کہنا ہے کہ آپس میں بات چیت کے بعد ہم نے فیصلہ کیا کہ ہمارے مطالبات پورے ہونے تک مذاکرات جاری رہیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مذاکرات کا اگلہ مرحلہ صرف چیئرمین ایف بی آر کے ساتھ ہوگا۔

تازہ ترین خبریں