01:16 pm
مولانا کے بڑے مطالبے پر حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کا بڑا فیصلہ

مولانا کے بڑے مطالبے پر حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کا بڑا فیصلہ

01:16 pm

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے وفاقی حکومت میں عہدہ مانگ لیا ۔تفصیلات کے مطابق سینئیر صحافی جان اچکزئی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ اور وزیراعظم عمران خان مولانا فضل الرحمن کا کوئی بھی مطالبہ نہیں مانیں گے۔جان اچکزئی نے دعویٰ کیا ہے کہ مولانا فضل الرحمن نے 3 وزارتیں،گورنرشپ اور اپنے لیے وفاقی مشیر برائے مذہبی امور کا عہدہ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔
جان اچکزئی نے مزید کہا کہ دھرنے سے متعلق حکمت عملی 20 تاریخ کے بعد طے کی جائے گی۔ ۔خیال رہے کہ گذشتہ روز خبر سامنے آئی تھی کہ وزیراعظم عمران خان نے فاقی وزیر برائے مذہبی امور نور الحق قادری ن کو مولانا فضل الرحمن سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی ہے ۔تاہم فاقی وزیر برائے مذہبی امور نور الحق قادری نے مختلف چینلز پر مولانا فضل الرحمان کے دھرنے اور آزادی مارچ کے حوالے سے چلنے والی خبروں اور اس حوالے سے وزیراعظم کی طرف سے کوئی ذمہ داری دیئے جانے کی سختی سے تردید کی ہے اور کہا ہے کہ ان خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے، اس حوالے سے کوئی حتمی فیصلہ ابھی تک پارٹی قیادت یا حکومت نے نہیں کیا ہے لہذا دھرنے اور آزادی مارچ کے حوالے سے مجھ سے منسوب خبریں بے بنیاد ہیں کیونکہ مجھے آزادی مارچ اور دھرنے کے حوالے سے وزیراعظم کی طرف سے کوئی ذمہ داری نہیں دی گئی۔ وفاقی وزیر نور الحق قادری نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں کہا کہ وہ کراچی میں مختلف پروگراموں میں مصروف تھے جبکہ مختلف چینلز پر مذکورہ خبر چلتی رہی تاہم اب وہ ان تمام چینلز کی اس خبر کی اپنے اس ویڈیو پیغام میں تردید کرتے ہیں۔