05:10 pm
نوازشریف کے حواری آج بھی عدالتوں اور اداروں کو خرید رہے ہیں، ارشاد بھٹی

نوازشریف کے حواری آج بھی عدالتوں اور اداروں کو خرید رہے ہیں، ارشاد بھٹی

05:10 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر ملکی صحافی اور تجزیہ کار ارشاد بھٹی کہتے ہیں کہ آپ نوازشریف کے خاندان کے بااثر ہونے کا اندازہ اس بات سے لگا لیں کہ یہ لوگ جیلوں سے بیٹھ کر ججز پر اپنا اثر و رسوخ دکھا رہے ہیں۔ اپنے ایک ویڈیو بیان میں ارشاد بھٹی نے بتایا ہے کہ جج ویڈیو سکینڈل کے معاملے کی تحقیقات کے وقت جب ایف آئی اے نے شہبازشریف سے ویڈیو کے ذرائع کے حوالے سے پوچھا تو انھوں نے حسب معمول جواب دیا ۔ مجھے تو پتہ ہی نہیں ہے
مریم نواز سے پوچھیں ۔ اور جب مریم نوازسے پوچھا تو انھوںنے کہا کہ ویڈیو سکینڈل کا منصوبہ ساز تو ناصر بٹ ہے اس سے پوچھیں ۔ تب تک ناصر بٹ لندن جاچکا تھا۔ پھر جج ارشد ملک کا بیان لیا گیا کہ انھیں کن کن لوگوں نے بلیک میل کیا۔ اس میں ناصر جنجوعہ ، غلام جیلانی اور تیسرا نام خرم یوسف کا نکلا۔ ارشاد بھٹی کہتے ہیں کہ اس وقت میاں نوازشریف کی حکومت نہیں ہے پھر بھی آپ اندازہ لگائیں کہ ان لوگوں نے پہلے ایف آئی اے کو مینیج کیا۔ اس کے بعد انھوںنے ایک ایماندار جج شائستہ کنڈی کو رشوت دینے کی کوشش کی لیکن وہ کیس سے الگ ہوگئیں۔ اس کے بعد جو نئے جج آئے انھوںنے ارشد ملک کا موقف جانے بغیر اس گاڈ فادر اور سسلین مافیا کو بری کر دیا۔ جس کے بعد ارشد ملک نے درخواست دی کہ میرا موقف سنے بغیر مجھے بلیک میل کرنے والوں کو بری کیسے کردیا گیا۔اس کیس کی دوبارہ تحقیقات کی جائیں۔ تب دوبارہ جو جج آئے تو انھوںنے ملزمان کی بریت کی فیصلے کے بارے میں ریمارکس دیے کہ یہ فیصلہ آنکھیں بند کر کے دیا گیاہے۔اب آپ اندازہ لگائیں کہ کس طرح جیلوں میں بیٹھ کر یہ لوگ ججز اور عدالتوں پر اثر انداز ہوتے ہیں۔